The news is by your side.

Advertisement

سری لنکا کے صدر نے پارلیمنٹ معطل کردی

کولمبو: سری لنکا کے صدر متھری پالا سری سینا نےغیرتوقع طور پرپارلیمنٹ کو تقریباََ ایک ماہ کے لیے مطعل کردیا۔

غیرملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق سری لنکا کے صدراوران کی یونٹی حکومت کے وزیراعظم کے درمیان اختیارات کی جنگ کے بعد صدر متھری پالا سری سینا نے پارلیمنٹ کو معطل کردیا۔

سری لنکن حکومت کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ملک کے آئین کے آرٹیکل 70 کے تحت صدرمتھری پالا سری سینا نے پارلیمنٹ کو معطل کردیا جس کا اطلاق 12 اپریل کی رات سے ہوگیا۔

خیال رہے کہ حالیہ دنوں میں سری لنکن صدر کی جانب سے وزیراعظم رانل وکریما سنگھے کی ذمہ داریاں کم کرتے ہوئے ان سے ملک کے مرکزی بینک سمیت دیگر اداروں سے متعلق فیصلے کرنے کا اختیار واپس لے لیا تھا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل 6 وزراء نے مشکل میں گھری ہوئی سری لنکن حکومت سے دستبردار ہونے کا اعلان کیا تھا اور وزیراعظم رانل وکریما سنگھے کی یونائیٹڈ نیشنل پارٹی نے صدرمتھری پالا سری سینا کے ساتھیوں پر استعفوں کے لیے دباؤ بڑھایا تھا۔

واضح رہے کہ جنوری 2015 ء میں سری لنکا میں طویل وقت تک حکمرانی کرنے والے رہنما مہندرا راجہ پاسکے کو صدارتی انتخاب میں متھری پالا سری سینا نے شکست دی تھی۔

متھری پالا سری سینا نے الیکشن میں زیادہ ووٹ اقلیتی علاقوں سے حاصل کیے تھے جہاں پر مہندرا راجہ پاسکے کو حمایت حاصل نہیں تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں