The news is by your side.

Advertisement

جیل سے مفرور قیدیوں کے حوالے سے شواہد ملے ہیں، ایس ایس پی سی ٹی ڈی

کراچی : ایس ایس پی سی ٹی ڈی عمر شاہد حیات نے کہا ہے کہ جیل سے فرارقیدیوں سے متعلق خط لکھا تھا ایسے ہائی پروفائل قیدیوں کو کراچی جیل میں رکھنا مناسب نہیں۔

ایس ایس پی سی ٹی ڈی عمرشاہد کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کراچی سینٹرل جیل دو ہائی پروفائل قیدیوں کے فرارہونے کی تحقیقات کر رہے ہیں ان دہشت گردوں کے فرار سے متعلق شواہد ملے ہیں۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ مفرو قیدیوں کے سامان تک رسائی دی جائے جو حال ہی میں رینجرز اور پولیس کے مشترکہ آپریشن کے دوران برآمد ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مفرو قیدی ممتازشیخ لشکرجھنگوی کا ہائی پروفائل دہشت گرد ہے جس سے متعلق آئی جی سندھ کوخط بھی لکھا تھا۔

ایس ایس پی ٹی ڈی عمرشاہد نے کہا کہ خط میں ایسے ملزمان کو کراچی کی جیلوں میں نہ رکھنے کی سفارش کی تھی کیوں کہ کراچی کی جیلوں میں ان ملزمان کے رابطے زیادہ فعال ہوتے ہیں۔


 *کراچی:‌ سینٹرل جیل سے کالعدم جماعت کے 2 خطرناک قیدی فرار 


ایس ایس پی سی ٹی ڈی عمر شاہد نے کہا کہ مفرور دہشت گرد شیخ ممتاز کا کراچی میں ہونا خطرناک ہے جس کے حوالے سے وزارت داخلہ کو آگاہ کر چکے ہیں۔

عمرشاہد نے کہا کہ ایسےملزمان کے مقدمات فوجی عدالت بھیجنے کی بھی سفارش کردی گئی ہے اور ساتھ ہی جیل اہلکاروں کے ریمانڈ کی اجازت بھی طلب کی ہے اس کے علاوہ دہشت گردوں کےجیل میں موجودساتھیوں تک رسائی دی جائے۔

انہوں نے کہا کہ جیل انتظامیہ نے دہشت گردوں کے فرار کا کمزور مقدمہ درج کرایا ہے جس پہ نظر ہے اس کے علاوہ دہشت گردکس کی ملی بھگت سے فرار ہوئے شواہد ملے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں