The news is by your side.

Advertisement

جی ڈی پی کی شرح 13 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، اسٹیٹ بینک

کراچی: اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے معاشی کارکردگی سے متعلق سہ ماہی جائزہ رپورٹ جاری کردی جس کے مطابق جی ڈی پی کی شرح 13 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری ملکی معاشی کارکردگی کی تیسری سہ ماہی جائزہ رپورٹ کے مطابق مالی سال 2018 کے دوران جی ڈی پی میں نمایاں ترقی دیکھی گئی اور کی شرح13سال کی بلندترین سطح 5.8 فیصد پر پہنچی۔

رپورٹ کے مطابق بڑھتے ہوئے جڑواں خسارے نے بہتر معاشی کارکردگی کا اثر زائل کردیا کیونکہ اخراجات زیادہ اور آمدنی کم ہونے کیوجہ سے ترقی کے فوائد نہ مل سکے، معاشی نمو کے باوجود تجارتی مالی خسارے نے پائیدار ترقی کو متاثر کیا۔

اسٹیٹ بینک کی رپورٹ کے مطابق امن وامان کی بہتر صورتحال سے کاروباری رجحانات کو فروغ ملا جبکہ روپے کی قدر میں کمی سے مہنگائی کی شرح میں اضافہ ہوا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ معاشی ترقی کا انحصار اندرونی اور بیرونی خسارے پر قابو پانے کے عوام پر ہوگا، جس کو ٹیکس بنیاد میں توسیع، ایف بی آر کی کارکردگی کو بڑھانے کے لیے اصلاحات بہت ضروری ہیں۔

مرکزی بینک کے مطابق مالی سال 2018 کے دوران مالیاتی خسارہ 9 ماہ میں جی ڈٰ پی کا 4.3 فیصد رہا، مالیاتی خسارے کے پورے سال کا ہدف جی ڈی پی کا 4.1 فیصد ہدف تھا۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق بڑے پیمانے پر لیے گئے بیرونی قرضوں نے حکومت کے لیے معاملات بدتر کردیے جبکہ روپے کی قدر میں کمی سے بیرونی قرضوں کے بوجھ میں بھی اضافہ ہوا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں