The news is by your side.

Advertisement

شہر قائد میں 5 ماہ میں فائرنگ اور پرتشدد واقعات میں 157 افراد قتل کردیئے گئے

کراچی : شہر قائد اسٹریٹ کرمنلز کے ہاتھوں یرغمال بن گیا، 5 ماہ میں فائرنگ اور پرتشدد واقعات میں 157 افراد قتل کردیئے گئے جبکہ شہریوں کو 12 ہزار 173 موبائل فون ،602 کاروں اور نو ہزار سے زائد موٹر سائیکلوں سے محروم کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سی پی ایل سی نے شہر قائد میں رواں سال کے 5 ماہ کے دوران ہونے والے جرائم کی رپورٹ جاری کردی، رپورٹ کے مطابق جنوری سے مئی کے درمیان فائرنگ اور پر تشدد واقعات میں 157 افراد کو قتل کردیا گیا۔

اسٹریٹ کرمنلز نے شہریوں کو 12 ہزار 173 موبائل فونز سے محروم کردیا، شہر کے مختلف علاقوں سے 602 کاریں چھینی اور چوری کی گئیں جبکہ 5 ماہ کے دوران ڈاکوؤں نے شہریوں کو 9 ہزار آٹھ سو موٹر سائیکلوں سے بھی محروم کردیا۔

رپورٹ کے مطابق کاریں چھیننے کی سب سے زیادہ وارداتیں گلشن اقبال ،گلستان جوہر ،کلفٹن ،حیدری ،اور ناظم آباد کے علاقوں میں ہوئیں ،جبکہ موبائل فون چھیننے کے واقعات میں حیدری ،نارتھ ناظم آباد ،گلشن اقبال ،ڈیفنس، کلفٹن ،طارق روڈ ،بہادر آباد ،فیڈرل بی ایریا ، صدر اور اولڈ سٹی ایریا کے علاقے سر فہرست رہے۔

سی پی ایل سی کے مطابق 5 ماہ کے دوران شہر میں چار بینک ڈکیتیوں میں 1 کروڑ 15 لاکھ سے زائد رقم لوٹ کی گئی جبکہ شہر میں بھتہ خوری کے 21 جبکہ اغوا برائے تاوان کے دو کیس رپورٹ ہوئے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں