The news is by your side.

Advertisement

چڑیا گھر کا ملازم یتیم زیبرے کی ماں بن گیا

زیبرے کے یتیم بچے کو سہارا دینے کے لیے چڑیا گھر کے ملازم نے زیبرے کا لباس پہن کر بچے کا دل بہلایا اور سب کے دل جیت لیے۔

کینیا کے تساو ایسٹ نیشنل پارک میں پیدا ہونے والے زیبرے کی ماں کو پیدائش کے چند روز بعد شیروں نے حملہ کر کے مار ڈالا تھا جس کے بعد بچے کے کھانا پینا بالکل چھوڑ دیا تھا۔

زیبرے کے بچے کو انتظامیہ نے کھانا بھی ڈالا مگر اُس نے نہیں کھایا جس کے بعد چڑیا گھر کے ملازم نے زیبرے جیسا لباس پہنا اور وہ اپنے ہاتھ میں دودھ سے بھری بوتل لے کر بچے کے پاس گیا۔

ملازم نے خود کو زیبرہ ظاہر کیا اور پھر آہستہ آہستہ اُس کے قریب ہوتا گیا، تھوڑی دیر بعد زیبرے کا یتیم بچہ ملازم کو اپنی ماں سمجھنے لگا اور وہ اُسی کے ہاتھ سے دودھ پینے لگا۔

مزید پڑھیں: ایک منہ اور دو دھڑ والے زیبرے کی حقیقت، انسانی عقل دنگ رہ گئی

رپورٹ کے مطابق ملازم کا نام میراکو لوسلی ہے جو ایک روز نیشنل پارک میں گھوم رہے تھے تو انہوں نے زیبرے کے بچے کو مایوس بیٹھا ہوا دیکھا۔

Pictured: One of the keepers wearing the black-and-white striped coat feed milk to baby Stripey

میراکولوسلی کا کہنا ہے کہ زیبرے کا بچہ اب مجھے اپنی ماں سمجھتا ہے اور وہ بالکل بے خوف ہوکر میرے ساتھ رہتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں