The news is by your side.

Advertisement

زیادتی کرنے والے شخص کو قتل کرنیوالے ملزم نے گرفتار دیدی

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں زیادتی کرنے والے شخص کو قتل کرنے والے ملزم نے تھانے میں جاکر گرفتاری دے دی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں زیادتی کرنے والے شخص کو قتل کرنے والے ملزم مدرسے کے طالب علم نے تھانہ لوہی بھیر پہنچ کر پولیس کو گرفتاری دے دی۔

ملزم نے پولیس کے سامنے اعتراف کیا کہ ’مقتول عادل نے اسلحہ کے زور پر مجھ سے زیادتی کی تھی، وقوع کے دن مقتول کھیتوں میں لے گیا موقع ملتے ہی طالب علم نے عادل کو قتل کردیا۔‘

پولیس کا کہنا ہے کہ طالب علم کو گرفتار کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: صدر مملکت نے انسداد عصمت دری آرڈیننس2020کی منظوری دے دی

واضح رہے کہ گزشتہ روز خواتین، بچوں کے خلاف جنسی زیادتی کے مقدمات کو جلد نمٹانے کے لئے صدر مملکت عارف علوی نےانسداد عصمت دری آرڈیننس2020کی منظوری دی تھی۔

آرڈیننس کے تحت جنسی زیادتی کے مقدمات کوجلد نمٹانےکیلئےخصوصی عدالتوں کاقیام عمل میں لایاجائیگا، خصوصی عدالتیں چار ماہ کےاندر جنسی زیادتی کےمقدمات نمٹائیں گی۔

آرڈیننس کے تحت وزیرِاعظم عمران خان انسدادِ جنسی زیادتی کرائسس سیلز کا قیام عمل میں لائیں گے، یہ سیل 06 گھنٹے کے اندر اندر متاثرہ افراد کا میڈیکو لیگل معائنہ کرانے کا مجاز ہوگا جبکہ قومی شناختی کارڈ بنانے والے ادارے نیشنل ڈیٹابیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کی مدد سے قومی سطح پر جنسی زیادتی کے مجرمان کا رجسٹر تیار کیا جائے گا۔

آرڈیننس کے تحت جنسی زیادتی کے متاثرین کی شناخت ظاہر کرنے پر پابندی لگاتے ہوئے اس عمل کو قابلِ سزا جرم قرار دے دیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں