The news is by your side.

Advertisement

وائٹ ہاؤس کے باہرہائی اسکول کےطلبا وطالبات کا احتجاج

واشنگٹن : امریکی ریاست فلوریڈا میں ہائی اسکول میں فائرنگ کے واقعے کے خلاف طلبا وطالبات وائٹ ہاؤس کے باہر احتجاجاََ لیٹے رہے اور ٹرمپ انتظامیہ کے خلاف ’شیم آن یو‘ کے نعرے لگائے۔

تفصیلات کے مطابق فلوریڈا کے ہائی اسکول میں فائرنگ کے واقعے میں 17 افراد کی ہلاکت کے بعد امریکہ میں ایک بار پھر گن ریفارمز کا موضوع زیربحث ہے۔

واشنگٹن میں وائٹ ہاؤس کے سامنے ہزاروں طلبا وطالبات اور والدین نے احتجاج کیا اور امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ سمیت نیشنل رائفل ایسوسی ایشن کے خلاف نعرے ’شیم آن یو‘ کے نعرے لگائے۔

فلوریڈا فائرنگ کے تناظرمیں مظاہرین 3 منٹ تک وائٹ ہاؤس کے باہر لیٹے رہے۔

وائٹ ہاؤس کے باہر احتاج کرنے والے طلبا وطالبات اور والدین کا کہنا تھا کہ اسلحے سے متعلق قوانین پراب سنجیدگی سے کام کرنا ہوگا۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر ساجد تارڑ کا کہنا ہے کہ فلوریڈا فائرنگ کے مجرم کا زہنی توازن درست نہ ہونے کے شواہد ملے ہیں۔

ریپبلکن رہنما نے کہا کہ ڈیموکریٹس اسلحے کے معاملے کوسیاسی بنانا چاہتے ہیں اور ری پبلکن پارٹی کے کردارکوخراب کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر ساجد تارڑ نے کہا کہ امریکہ میں فائرنگ سے زیادہ چاقو کے ساتھ قتل ہوئے۔


فلوریڈا کے ہائی اسکول میں فائرنگ، 17 افراد ہلاک


خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے 15 جنوری کو فلوریڈا کے ہائی اسکول میں 19 سالہ حملہ آور نے اسکول کے اندر گھستے ہی فائرنگ کردی تھی جس کے نتیجے میں 17 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں