پولیس کا محکمہ کسی شخصیت کا محتاج نہیں، انور سیال -
The news is by your side.

Advertisement

پولیس کا محکمہ کسی شخصیت کا محتاج نہیں، انور سیال

کراچی: وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے کہا ہے کہ میرے ہوتے ہوئے کسی پولیس افسر کو ڈرنے اور ناجائز احکامات ماننے کی ضرورت نہیں، سندھ پولیس کسی افسر کی محتاج نہیں، آئی جی سندھ میرے ماتحت کے بھی ماتحت ہیں۔

پولیس افسران کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ سندھ نے کہا  کہ میرے ہوتے ہوئے تمام کام میرٹ پر ہوں گے، آئی جی سندھ سے تعلقات کشیدہ نہیں کیونکہ میرے پاس 20 گریڈ کے اور بھی افسران موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج اے ڈی خواجہ آئی جی سندھ کے عہدے پر تعینات ہیں کل کوئی اور ہوگا، محکمہ پولیس کوئی سیاسی جماعت نہیں جو کسی کا محتاج ہو، اے ڈی خواجہ جب آئی جی نہیں تھے اُس وقت بھی شہر میں امن تھا اور آج بھی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کا اختیار ہے کہ وہ کس کے ساتھ چلے سکتی ہے یا نہیں مگر اے ڈی خواجہ کا معاملہ عدالت میں ہے اس لیے فیصلہ انہی پر چھوڑ دیں کیونکہ پی پی نے ہمیشہ عدالتوں کا احترام کیا۔

سہیل انور سیال نے کہا کہ آج سیکیورٹی کے حوالے سے اجلاس طلب کیا تھا تاہم جس دن اعلیٰ سطح اجلاس طلب کیا اُس دن آئی جی سندھ کو بھی بلایا جائے گا۔

انور سیال نے کہا کہ افسران آتے اور جاتے رہتے ہیں،تماشہ نہیں بنانا چاہیے، آئی  جی کو ہٹانے سے متعلق  انور مجید کا کوئی تعلق نہیں، صوبائی حکومت کسی شخص کے کہنے پر نہیں چل سکتی، ہم آپریشن ردالفساد کو ہرصورت کامیاب بنائیں گے۔

اجلاس سے متعلق گفتگو

وزیر داخلہ سندھ نے کہا کہ رمضان المبارک میں امن و امان کی صورتحال کو ہر صورت بہتر بنایا جائے گا تاکہ شہری اطمینان سے عبادات اور خریداری کرسکیں۔

انہوں نے کہا کہ شہر میں اضافی نفری تعینات کی جائے گی جس کے لیے سعید آباد ٹریننگ سینٹر سے بھی اہلکاروں کو بلایا جائے گا، کوشش ہوگی کہ تروایح والے مقامات کو مکمل سیکیورٹی فراہم کریں۔

سہیل انور سیال نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ رمضان المبارک میں ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کے لیے ایس ایس پیز سڑکوں پر اپنی ڈیوٹیاں سرانجام دیں گے اگر کسی افسر نے غلفت برتی تو اُس کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

پولیس افسران کے اہم اجلاس میں آئی جی سندھ کی عدم شرکت

سندھ کے نئے وزیر داخلہ سہیل انور سیال کی زیر صدارت پولیس افسران کے اجلاس میں آئی جی سندھ شریک نہ ہوئے،  وزیر داخلہ اور آئی جی سندھ کے درمیان اختلافات کی افواہیں زیر گردش کررہی ہیں۔ اجلاس میں سندھ پولیس کی کارکردگی اور امن و امان سے متعلق امور زیر غور آئے۔

اجلاس کے بعد وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے کہا کہ آئی جی سندھ نے حکم دیا کہ آؤٹ آف اسٹیشن افسر جانے کی اجازت لیں۔ کچھ افسران تو کراچی میں ہیں تو انہیں اجازت لینے کی کیا ضرورت ہے۔

ترجمان سندھ پولیس کا کہنا ہے کہ آئی جی سندھ کسی پولیس افسر کو میٹنگ میں شرکت سے نہیں روکتے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں