The news is by your side.

Advertisement

سوئی سدرن گیس نے کراچی کے سرکاری اسپتالوں کی گيس منقطع کرنے کی تیاری مکمل کرلی

کراچی : سوئی سدرن گیس کمپنی نے نادہندہ سرکاری اسپتالوں کی گیس منقطع کی تیاری مکمل کرلی، آج 5 بجے تک مہلت کا آخری وقت ہے۔

تفصیلات کے مطابق سوئی سدرن گیس کمپنی نے نادہندہ سرکاری اسپتالوں کی گیس منقطع کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے حتمی فہرستیں مرتب کرلیں ، ترجمان کا کہنا ہے کہ آج 5 بجے تک مہلت کا آخری وقت ہے، پہلے مرحلے میں بڑے سرکاری نادہندہ اسپتالوں کی گیس کاٹی جائے گی۔

ترجمان نے کہا کہ نادہندہ ادراوں کے خلاف کارواٸی کیلٸے جامع حکمت عملی بنالی ہے، این آئی سی ایچ ، لیاری جنرل اسپتال ،سول ہسپتال کا ٹراماسینٹر ، سندھ گورنمنٹ اسپتال، سول سروسز اسپتال نزد خالق دیناہال ، آئی سی یو ٹراماسینٹر اینڈ کارڈک سینٹر کورنگی 5 نمبر نادہندگان میں شامل ہیں۔

ایس ایس جی سی کے مطابق ادائیگی کےلیےمتعددبارنوٹس جاری کیےگئے، این آئی سی ایچ 52 لاکھ سے زائد،لیاری جنرل اسپتال پر22لاکھ روپے اور سول اسپتال کےٹراماسینٹرپر2کروڑ78لاکھ سےزائد واجب الادا ہیں۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ آئی سی یو ٹرامااینڈ کارڈک سینٹر کورنگی 5 نمبر 33 لاکھ اور سندھ گورنمنٹ اسپتال نارتھ کراچی 26 لاکھ سےزائد کا نادہندہ ہے جبکہ کھوکھراپار اسپتال پر26 لاکھ سےزائد اور سول سرجن اسپتال ایم اے جناح روڈ پر 33 لاکھ 98 ہزار سے زائد واجب الادا ہیں۔

سوٸی سدرن گیس کے مطابق 15 ستمبر کے بعد کسی بھی ڈفالٹر کے ساتھ کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی، مقررہ تاریخ تک واجب الادا رقم ادا نہیں کی گٸی تو گیس کے کنکشنز منقطع کئے جائیں گے۔

یاد رہے جولائی میں وزیراعظم عمران خان نے اجلاس میں کہا تھا کہ گیس کے شعبے میں گھریلو اور صنعتی شعبے کی ضروریات بڑھ رہی ہیں،مقامی طور پر گیس کے محدود ذخائر فوری جامع منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ گیس معاملات کا تعلق کسی ایک صوبے سے نہیں بلکہ پورے ملک سے ہے،گیس معاملات پر باہمی مشاورت سے مستقبل کے لائحہ عمل کی ضرورت ہے، گیس شعبے سے متعلق حقائق مشترکہ مفادات کی کونسل کے سامنے رکھے جائیں،گیس شعبے کے نامور ماہرین سے مشاورت کا عمل شروع کیا جائ

Comments

یہ بھی پڑھیں