The news is by your side.

Advertisement

افغانستان: 2 خودکش دھماکے،31 افرادہلاک،داعش نے ذمہ داری قبول کرلی

کابل : افغانستان کے دارالحکومت کابل اور صوبہ بغلان میں دو خودکش دھماکوں کے نتیجے میں 31 افراد ہلاک جبکہ 62 سے زائد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان کے دارالحکومت کابل میں اتوار کے روز خودکش حملہ آور نے خود کو اس وقت دھماکے اٹرایا جب شہری انتخابی مرکز میں رجسٹریشن کروارہے تھے۔ خودکش حملے کے نتیجے میں 31 افراد ہلاک جبکہ درجنوں شہری زخمی ہوگئے۔

دوسرا خودکش حملہ افغانستان کے صوبے بغلان کے شہر پل خمری میں ہوا ہے، جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک جبکہ 5 سے زائد زخمی ہوگئے۔

افغان حکام کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ خودکش حملہ آور نے انتخابی مرکز کے باہر خود کو دھماکے سے اڑا دیا، جس کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے علاقے کو کلیئر کرایا.

افغانستان میں سرگرم عالمی دہشت گرد تنظیم داعش نے افغان خبر رساں ادارے کے  ذریعے خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

دوسری جانب افغان طالبان کے ترجمان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بیان دیا ہے کہ ’مذکورہ خودکش حملوں میں طالبان ملوث نہیں ہے‘۔

افغانستان کی وزارت داخلہ کے ترجمان نجیب دانش کا کہنا ہے کہ ’پہلا دھماکا دارالحکومت کابل کے مغربی حصّے دست برچی میں ہوا ہے، جس کی اکثریت ہزارہ کمیونٹی پر مشتمل ہے۔ اس سے قبل بھی مذکورہ علاقے میں خود کش حملے ہوئے ہیں جس کی ذمہ داری داعش نے قبول کی تھی۔


افغانستان: ریسلنگ اسٹیڈیم کے قریب کار بم دھماکا، 14 افراد جاں بحق، درجنوں زخمی ہوگئے


یاد رہے کہ گذشتہ ماہ کے آخر میں افغانستان کے صوبہ ہلمند کے دار الحکومت لشکر گاہ میں کار بم دھماکا اس وقت ہوا کہ جب ریسلنگ اسٹیڈیم کے اندر کشتی کا مقابلہ جاری تھا، دھماکے میں 14 افراد جاں بحق ہوئے، ہلاک اور زخمیوں میں بچے بھی شامل ہیں۔

خیال رہے کہ افغانستان اس سے قبل متعدد دفعہ بم دھماکوں کی زد میں آیا ہے جس میں سیکڑوں افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں