شکارپور میں امام بارگاہ پر خود کش دھماکے کا مقدمہ درج -
The news is by your side.

Advertisement

شکارپور میں امام بارگاہ پر خود کش دھماکے کا مقدمہ درج

شکارپور: امام بارگاہ پر ہونے والے خود کش دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے، خود کش حملہ آوروں کے سہولت کاروں کی تلاش میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق شکارپور میں پولیس اہلکاروں نے جان کی بازی لگا کر درجنوں لوگوں کو بچالیا، امام بارگاہ پر ہونے والے خود کش دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے  مقدمے میں دو نامعلوم سمیت چھ افراد نامزد کئے گئے ہیں۔

پولیس کے مطابق مقدمے میں گرفتار دہشت گرد عثمان بروہی اور اسکے دو فرار ساتھی عمر، حفیظ اور نامعلوم ہلاک دہشت سمیت چھ افراد کے خلاف درج کیا گیا، مقدمہ شہری کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔


 

مزید پڑھیں:  شکار پورمیں گرفتارخود کش بمبار کے تہلکہ خیز انکشافات


یاد رہے کہ  شکارپور کی تحصیل خانپورمیں دوخودکش بمباروں نےنمازعیدکے اجتماع میں گھسنے کی کوشش کی، پولیس نے روکا تو ایک حملہ آور نے دروازے پر جا کر خود کو دھماکے سے اڑا دیا، دھماکے سے تین اہلکار بھی زخمی ہوئے جبکہ دوسرے خود کش بمبار نے بھی خود کو اڑانے کی کوشش کی لیکن اہلکاروں نے بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئےاُسے پکڑ لیا اور حملہ آور سے برآمد خودکش جیکٹ کو ڈی فیوز کردیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق دونوں حملہ آوروں سے دس دس کلو بارودی مواد سے بھر ی دو خودکش جیکٹ بر آمد کئے گئے۔

خودکش حملہ میں تین پولیس اہلکار بھی شدید زخمی ہوگئے، جنہیں ہیلی کاپٹر کے زریعے کراچی پہنچا دیا گیا، آئی جی زخمی اہلکاروں کے نام نذر محمد، رفیق احمد ، محمد پٹھان بتائے جاتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں