The news is by your side.

سنگین جرائم میں ملوث ڈاکو عبدالرسول بھٹو مارا گیا، سر کی قیمت ایک کروڑ

سکھر: سنگین جرائم میں ملوث ڈاکو عبدالرسول بھٹو ساتھی سمیت پولیس مقابلے میں ہلاک ہو گیا، اس کے سر کی ایک کروڑ قیمت مقرر کرنے کی سفارش کی گئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق بین الصوبائی کار اسنیچنگ، دہشت گردی، اغوا برائے تاوان جیسے سنگین جرائم میں ملوث ڈکیت گینگ کا سرغنہ ساتھی سمیت ہلاک ہو گیا۔

تھانہ سائٹ کی حدود نصیرآباد کے قریب پولیس اور ڈاکوؤں میں مقابلہ ہوا، پولیس نے مشکوک کار کو رکنے کا اشارہ کیا تو کار سوار ملزمان ناکہ توڑ کر فرار ہونے لگے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ اہل کاروں نے بھاگنے والے ملزمان کا تعاقب کیا، اس دوران ڈاکوؤں نے پولیس پر فائرنگ شروع کر دی، جس کے جواب میں کی گئی پولیس اہل کاروں کی فائرنگ سے 2 ڈاکو زخمی ہو گئے۔

پولیس رپورٹ کے مطابق زخمی ڈاکوؤں کو اسپتال روانہ کیا گیا، لیکن اسپتال پہنچنے پر ڈاکٹروں نے ان کی ہلاکت کی تصدیق کر دی، ڈاکوؤں کی شناخت عبدالرسول بھٹو عرف کلیم بھٹو، اور سہیل میرانی کے نام سے ہوئی ہے۔

پولیس ذرائع کے مطابق ڈاکوؤں سے پستول، گولیاں، جیمر ڈیوائسز، جعلی نمبر پلیٹس کے ساتھ ساتھ موبائل فونز اور دیگر آلات اور مسروقہ کار بھی برآمد ہوئی۔

واضح رہے کہ محکمہ پولیس کی جانب سے حکومت سندھ سے ہلاک ڈاکو کے سر کی قیمت 1 کروڑ روپے مقرر کرنے کی سفارش کی گئی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں