site
stats
سندھ

دس روز قبل ڈوبنے والا نوجوان ڈرامائی انداز میں گھر پہنچ گیا

سکھر: دریائے سندھ میں گرنے والا نوجوان 10 دن بعد خود ہی گھر پہنچ گیا، اہل خانہ کو خوشگوار حیرت ہوئی۔ آصف جمیل سیلفی لیتے ہوئے لینس ڈاؤن برج سے دریا میں جا گرا تھا۔ نوجوان کا کہنا ہے کہ دریا میں گرنے کے بعد آنکھ کھلی تو خود کو جنگل میں پایا۔

تفصیلات کے مطابق سکھر کا رہائشی نوجوان آصف جمیل چار جنوری کو سیلفی بنانے کے دوران لینس ڈاؤن پل انڈس واٹر سے دریا میں جاگرا تھا.

اہل خانہ دس روز تک اسے مختلف مقامات پر تلاش کرتے رہے لیکن نہیں ملا، جبکہ جائے وقوعہ پر دو روز تک غوطہ خوروں نے بھی ڈوبنے والے نوجوان کی تلاش جاری رکھی تھی۔ لیکن ان کو بھی مایوسی کا سامنا کرنا پڑا.

آصف جمیل کا کہنا ہے کہ چار جنوری کو میں اپنی بیوی اور بیٹی کے ساتھ تفریح کی غرض سے لینس ڈاؤن پل پر تھا، سیلفی بناتے ہوئے دریا میں گرا تو اس کے بعد مجھے کچھ پتا نہیں چل سکا اور جب میری آنکھ کھلی تو خود کو ایک جنگل میں پایا، تو وہاں موجود مچھیروں نے مجھے طبی امداد دی.

آصف جمیل جیسے ہی گھر پہنچا تو اپنی بیٹی سے لپٹ کر خوب رویا ، گھر والوں کا کہنا ہے کہ آصف کا واپس آنا کسی معجزہ سے کم نہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top