The news is by your side.

زنانہ آواز سن کر ڈاکوؤں کے ہتھے چڑھنے والے مغوی بازیاب

سکھر: دو ماہ قبل زنانہ آواز سن کر ڈاکوؤں کے نرغے میں پھنسنے والے قیدیوں کو بحفاظت بازیاب کرالیا گیا ہے۔

سکھر پولیس کے مطابق دو ماہ قبل سکھر کے چار رہائشیوں کو شادی میں روٹیاں پکانے کی غرض سے کندھ کوٹ بلایا گیا جہاں انہیں زنانہ آواز والے کینگ نے اغوا کرلیا تھا۔

پولیس نے ڈاکوؤں کے خلاف خفیہ اطلاعات پر شکارپور کے کچے میں کامیاب آپریشن کیا، اس دوران محمد باغ نامی علاقے سے چاروں مغویوں کو بازیاب کرالیا گیا۔

ڈاکوؤں کے چنگل سے آزاد ہونے والے مغویوں نے پولیس کو ابتدائی بیان قلمبند کرایا بعد ازاں انہیں سکھر بھیج دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: سکھر: درخت کاٹنے کےتنازع پر جھگڑا، 6 افراد ہلاک

واضح رہے کہ گزشتہ چند سالوں سے کچے کے ڈاکوؤں نے اغوا برائے تاوان کی حکمت عملی تبدیل کر لی ہے۔ اب ڈاکو انجان نمبرز پر کالز ملا کر فون اٹھانے والے کو خاتون کی آواز میں باتیں کر کے اپنے جال میں پھنساتے ہیں۔

ان باتوں کے جال میں پھنسے والا شخص جب خاتون سے ملاقات کی لالچ میں ڈاکوؤں کے بتائے ہوئے پتے پر ملاقات کے لیے پہنچتا ہے تو اسکا استقبال کرنے کے لیے مسلح افراد پہلے سے موجود ہوتے ہیں اور فون کالر آسانی سے اغوا ہو جاتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں