The news is by your side.

Advertisement

بھارت سےدو طرفہ تجارت معطل کرنے پرسمری کابینہ میں پیش کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد : بھارت سےدو طرفہ تجارت معطل کرنے پرسمری کل وفاقی کابینہ میں منظوری کے لیے پیش کیےجانے کا امکان ہے ، ذرائع وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ تجارت کی معطلی سے بھارت کو شدید دھچکا لگے گا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت سےدو طرفہ تجارت معطل کرنے پرسمری کابینہ میں پیش کرنے کا فیصلہ کرلیا ، وزارت تجارت سمری آج تیار کرلے گی ، سمری کل ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں منظوری کےلیےپیش کیے جانے کا امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ منظوری کے بعد درآمداور برآمد آرڈر میں ترمیم کا ایس آر او جاری ہوگا۔

ذرائع وزارت تجارت نے کہا تجارت کی معطلی سے بھارت کو شدید دھچکا لگے گا، اس وقت دو طرفہ تجارت بھارت کے حق میں ہے۔

مزید پڑھیں : پاکستان کا بھارت سے سفارتی تعلقات محدود، دو طرفہ تجارت معطل کرنے کا فیصلہ

حکام کے مطابق سالانہ دو طرفہ تجارت کا حجم 2 ارب 12 کروڑ 40 لاکھ ڈالر ہے ، پاکستان کی درآمدات کا حجم ایک ارب 80کروڑ ڈالر ہے جبکہ پاکستان کی بھارت کےلیےبرآمدات کا حجم 32کروڑ 40لاکھ ڈالر ہے۔

یاد رہے قومی سلامتی کمیٹی نے بھارت سےدوطرفہ تجارت معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

اجلاس کے اعلامیہ میں کہا گیا تھا کہ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل میں لے جایا جائے گا، 14 اگست کشمیریوں سے اظہار یک جہتی کے طور پر منایا جائے گا، جب کہ 15 اگست کو یوم سیاہ منایا جائے گا جبکہ بھارتی عزائم بے نقاب کرنے کے لیے سفارتی ذرایع استعمال کرنے اور مسلح افواج کو مکمل تیار رہنے کی ہدایت کی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں