The news is by your side.

Advertisement

سورج کی روشنی ذیابیطس کے مرض کو روکنے میں‌ معاون

کیلی فورنیا: امریکا کے طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ روزانہ سورج کی روشنی لینے والے افراد کے جسم میں وٹامن ڈی کی مقدار بڑھتی ہے جو شوگر (ذیابیطس) کے مرض کو روکنے میں مددگار ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکا کی سیؤل یونیورسٹی کے ماہرین نے ذیابیطس کے مرض کی روک تھام اور اس مرض کے بڑھنے کی وجوہات جاننے کے لیے مطالعاتی تحقیق کی۔

مطالعاتی کمیٹی کی سربرا ڈاکٹر سو پارک نے کہا کہ ’تحقیق کے دوران ہم نے شرکت کرنے والے لوگوں کے  جسم میں موجود وٹامن ڈی کی موجودگی کا تناسب دیکھا، جس کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ جن کے جسم میں 30 این جی ملی میٹر وٹامن ڈی موجود ہے اُن کو ذیابیطس کا مرض لاحق ہونے کے خطرات ایک تہائی حد تک ہیں‘۔

مزید پڑھیں: دانتوں کی صفائی، شوگر سے محفوظ رکھنے میں‌ معاون

تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ امریکی شہریوں میں 1980 کے مقابلے میں وٹامن ڈی کی شرح بہت زیادہ حد تک کم ہوگئی جو انتہائی خطرناک ہے تاہم مطالعے میں شامل 903 افراد ایسے بھی تھے جن کی عمریں 74 کے قریب تھیں وہ بالکل تندرست زندگی گزار رہے تھے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ ’وٹامن ڈی کی انسانی جسم میں کمی کے باعث ذیابیطس کا مرض بڑھنے کے خدشات بہت زیادہ حد تک بڑھ جاتے ہیں اور وہ بڑھتی عمر میں اعصاب کمزور ہونے کی وجہ سے شوگر کی بیماری میں مبتلا ہوجاتے ہیں‘۔

یہ بھی پڑھیں: فوری توجہ کی متقاضی ذیابیطس کی 8 علامات

اسے بھی پڑھیں: تنہائی پسند افراد کو شوگر کا مرض لاحق ہوسکتا ہے، ماہرین

امریکی طبی جریدے پلس ون میں شائع ہونے والی تحقیق میں ماہرین نے مشورہ دیا ہے کہ اگر کوئی شخص شوگر کی بیماری سے محفوظ رہنا چاہتا ہے تو وہ روزانہ سورج کی روشنی میں باہر نکلے۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ سورج کی شعاعیں جب انسانی جسم پر پڑھتی ہیں تو اس کی وجہ سے جسم میں وٹامن ڈی کی مقدار بڑھ جاتی ہے اور جب وٹامنز کی مقدار مقررہ ہوگی تو شوگر کی بیماری سے وہ خود بہ خود محفوظ رہے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں