The news is by your side.

Advertisement

پائلٹس کی جعلی ڈگریوں پرازخودنوٹس کیس کی سماعت کل تک ملتوی

لاہور : سپریم کورٹ لاہوررجسٹری نے پی آئی اے اوردیگرایئرلائنزمیں پائلٹس کی جعلی ڈگری کیس کی سماعت کے دوران ڈگریوں کی تصدیق میں تعاون نہ کرنے والے تعلیمی اداروں پربرہمی کا اظہار کیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے پی آئی اے اوردیگرایئرلائنزمیں پائلٹس کی جعلی ڈگری کیس کی سماعت کی۔

عدالت میں سماعت کے دوران سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے رپورٹ پیش کی گئی جس میں بتایا گیا کہ 7پائلٹس اور91 کیبن کریوکوشوکازنوٹس جاری کیے گئے۔

سی اے اے کی رپورٹ کے مطابق تعلیمی ادارے ڈگریوں کی تصدیق میں تعاون نہیں کررہے ہیں، پائلٹس ودیگراسٹاف کی ڈگریاں تصدیق کررہے ہیں۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بتایا کہ ملازمین نےعدالتوں سے حکم امتناع لے رکھے ہیں، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ سی اے اے حکم امتناع کے باوجود اپنی انکوائری جاری رکھے۔

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری نے ریمارکس دیے کہ انکوائری مکمل ہونے کے بعد حکم امتناع کا جائزہ لیں گے، عدالتیں انکوائری رپورٹ کی روشنی میں حکم امتناع کے معاملات دیکھیں۔

عدالت نے ڈگریوں کی تصدیق میں تعاون نہ کرنے پرتعلیمی اداروں پراظہاربرہمی کرتے ہوئے ڈگریوں کی تصدیق میں تعاون نہ کرنے والے 69 تعلیمی اداروں کے مالکان کو طلب کرلیا۔

سپریم کورٹ لاہوررجسٹری نے پی آئی اے اوردیگرایئرلائنزمیں پائلٹس کی جعلی ڈگری کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں