The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ میں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس پرسماعت پیرتک ملتوی

اسلام آباد : سپریم کورٹ میں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ جے آئی ٹی کومعلومات ملنی شروع ہوگئی ہیں، رپورٹ کا انتظار ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جعلی بینک اکاؤنٹس کیس پرسماعت ہوئی۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ نیشنل بینک اورسندھ بینک کے قرضوں کا سوچنا چاہیے تھا، اس وقت بینکوں کا نقصان ہو رہا ہے۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ جے آئی ٹی کومعلومات ملنی شروع ہوگئی ہیں، رپورٹ کا انتظار ہے۔

اومنی گروپ کے وکیل منیربھٹی نے کہا کہ ہم بینکوں سے مذاکرات کررہے ہیں، 10 دن کا وقت دے دیں۔

بعدازاں سپریم کورٹ نے جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کی سماعت 5 نومبر بروز پیرتک کے لیے ملتوی کردی۔

جعلی بینک اکاؤنٹ کیس: انورمجید بیٹے سمیت عدالت سے گرفتار

یاد رہے کہ رواں سال 15 اگست کو جعلی بینک اکاؤنٹ کیس میں اومنی گروپ کے انور مجید اور ان کے بیٹے کو گرفتار کرلیا گیا تھا، حفاظتی ضمانت اور بینک اکاؤنٹ بحال کرنے کی درخواست مسترد کردی گئی تھی۔

سپریم کورٹ آف پاکستان نے انور مجید فیملی کا نام ایگز ٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالنے کا حکم بھی صادر کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں