The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے چیک ریپبلک کی ماڈل ٹریزا کو بیرون ملک جانے سے روک دیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے چیک ریپبلک کی ماڈل ٹریزاکو بیرون ملک جانے سے روکتے ہوئے نوٹس جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں جمہوریہ چیک کی ماڈل ٹریزا منشیات کیس کی سماعت ہوئی ، جسٹس اعجازالاحسن کی سربراہی می3 رکنی بینچ نے سماعت کی۔

وکیل کسٹم وقاراے شیخ نے بتایا کہ ٹرائل کورٹ نے ملزمہ ٹریزاکومنشیات کیس میں 8سال کی سزاسنائی لیکن ایپلیٹ عدالت نے ملزمہ کو بری کر دیا۔

وکیل کا کہنا تھا کہ ملزمہ نے ٹکٹ کروالیا ہے 23 اپریل کو بیرون ملک روانہ ہوجائے گی۔

سپریم کورٹ نے چیک ریپبلک کی ماڈل ٹریزا کو بیرون ملک جانے سے روک دیا اور کسٹم کی اپیل پرغیرملکی ماڈل کونوٹس جاری کر کے سماعت 20اپریل تک ملتوی کردی۔

یاد رہے ٹرائل کورٹ نے غیرملکی ماڈل کو ساڑھے 8سال قید کی سزا سنائی تھی تاہم لاہور ہائی کورٹ نے منشیات کیس میں غیر ملکی ماڈل ٹریزا کو ڈھائی سال بعد رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔

خیال رہے چیک ریپبلک کی ماڈل ٹریزا کو لاہور ائیرپورٹ سے دسمبر 2017 کو گرفتار کیا گیا تھا، جس کے بعد ٹریزا کے خلاف کسٹم حکام نے مقدمہ درج کیا

بعد ازاں لاہور سیشن کورٹ نے ماڈل ٹریزا کو اپریل 2019 میں قید کی سزا سنائی اور ٹرائل کورٹ نے شریک ملزم حفیظ کو عدم شوائد کی بنیاد پر بری کیا گیا تھا جبکہ ماڈل ٹریزا کوٹ لکھپت جیل میں قید تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں