The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے رائل پام کلب انتظامیہ تحلیل کردی

لاہور: ریلوے اراضی لیزپر دینے کے خلاف از خود نوٹس پر سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ریلوے اراضی پرہاؤسنگ سوسائٹیاں بنانے پر پابندی لگا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں بینچ نے ریلوے اراضی لیزپر دینے کے خلاف از خود نوٹس پر سماعت کی۔

عدالت نے سماعت کے دوران میسرزفرگوسن کورائل پام کلب کی نئی انتظامیہ مقرر کرتے ہوئے ریکارڈ تحویل میں لینے کا حکم دے دیا، پرانی انتظامیہ کلب کی حدود میں داخل نہیں ہوسکے گی۔

سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق کلب میں تمام پروگرام اورسرگرمیاں معمول کے مطابق چلیں گی، ریلوے سے متعلق کوئی ریکارڈ رائل پام کلب سے باہر نہیں جائے گا۔

عدالت نے رائل پام سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے تمام احکامات بھی غیرمؤثر کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں زیرالتوا کلب کے تمام مقدمات منگوا لیے۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے ریمارکس دیے کہ ریلوے اراضی پرہاؤسنگ سوسائٹیاں بنانے پر پابندی لگا رہے ہیں، زرعی اراضی لیزپر3 سال سے زائد دینے پربھی پابندی عائد کررہے ہیں۔

یاد رہے کہ 24 دسمبر جو سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے ریلوے خسارہ ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی تھی۔

سپریم کورٹ نے سپریم کورٹ نے چکوال سمیت دیگر مقامات پرریلوے اراضی سے تجاوزات ہٹانے کا حکم دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں