The news is by your side.

Advertisement

میونسپل کارپوریشن کی پلاسٹک بیگ پرپابندی کے اقدام کو سرہاتے ہیں، سپریم کورٹ

اسلام آباد: اسلام آباد ویسٹ مینجمنٹ اینڈ سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹس کیس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے ریمارکس دیے کہ میونسپل کارپوریشن کی پلاسٹک بیگ پرپابندی کے اقدام کو سرہاتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں اسلام آباد ویسٹ مینجمنٹ اینڈ سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹس کیس کی سماعت کے دوران سیکرٹری داخلہ پیش ہوئے۔

عدالت عظمیٰ میں سماعت کے دوران جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیے کہ ماسٹرپلان کمیشن نے ویسٹ مینجمنٹ پلانٹس پرکوئی تجاویز نہیں دیں۔

سیکرٹری داخلہ نے جواب دیا کہ ماسٹر پلان میں تبدیلی کا معاملہ نئی حکومت کے ایجنڈے پرہے، ماسٹر پلان کمیشن آئندہ 40 سال کے اقدامات کی تجویز دے گا۔

جسٹس عمر عطا بندیال نے کمشنر اسلام آباد کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کمشنر اسلام آباد عامر احمد علی بڑے اسمارٹ آفیسر ہے۔

انہوں نے ریمارکس دیے کہ کمشنراسلام آباد کچھ کرنے کا جذبہ رکھتے ہیں، کمشنر اسلام آباد بھی مستقل سی ڈی اے کے سربراہ نہیں، سی ڈی اے کے لیے مستقل لیڈر شپ ہونی چاہیے۔

عدالت عظمیٰ نے ریمارکس دیے کہ میونسپل کارپوریشن کی پلاسٹک بیگ پرپابندی کے اقدام کو سرہاتے ہیں۔

سپریم کورٹ نے آئندہ سماعت پرٹریٹمنٹ پروجیکٹس پر پیشرفت کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی ایک ماہ تک کے لیے ملتوی کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں