The news is by your side.

Advertisement

کوئی چیز پتھر پر لکیر نہیں ہوتی، سپریم کورٹ کا فیصلہ

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے ماتحت عدالتوں کے فیصلوں سے متعلق اہم فیصلہ سناتے ہوئے کہا کوئی چیز پتھر پر لکیر نہیں ہوتی، ماتحت عدلیہ کے فیصلے میں کوئی غلطی نظر نہ آئے تو مختصر فیصلہ دینا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے ماتحت عدالتوں کے فیصلوں پر نظر ثانی اپیلوں کے کیس میں اہم فیصلہ جاری کردیا، فیصلہ جسٹس منصور علی شاہ نے تحریر کیا۔

ماتحت عدالتوں کے فیصلوں سے متعلق سپریم کورٹ نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ کوئی چیز پتھر پر لکیر نہیں ہوتی، بدلتے وقت کے ساتھ پرانے طریقہ کار بدل جاتے ہیں۔

سپریم کورٹ نے فیصلے میں کہا کہ بڑھتی آبادی اور پیچیدہ قانونی مسائل کا تصوراتی حل ضروری ہے، دنیا بھر کی عدالتوں میں جدید طریقے اپنائے جارہے ہیں، ماتحت عدالت کے فیصلے کوبرقرار رکھنا ہو تو وضاحت کی ضرورت نہیں۔

فیصلے میں کہا گیا کہ سپریم کورٹ کو صرف ماتحت عدلیہ کے فیصلے کی توثیق کرنی چاہئے، تفصیلی وجوہات ،دوبارہ تحقیقات غیر ضروری ،عوام کے وقت کا ضیاع ہے، وقت بچا کر ان فیصلوں پر لگانا چاہیے، جن سے اختلاف کیا جائے۔

فیصلے کے مطابق ماتحت عدلیہ کے فیصلے میں کوئی غلطی نظر نہ آئے تو مختصر فیصلہ دینا چاہیے، یہ عدالتی طریقہ شفاف ٹرائل کے بالکل خلاف نہیں ہے، ٹھوس وجوہات نہ ہونے پرنظر ثانی اپیلیں خارج کی جاتی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں