site
stats
سندھ

کراچی:مرکز اسلامی کو سنیما کیسے بنایا گیا، سپریم کورٹ برہم

کراچی: سپریم کورٹ نے ایف بی ایریا میں مرکز اسلامی کو سنیما میں تبدیل کیے جانے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامک سینٹر کو سینما گھر کیسے بنایا جاسکتا ہے اس بات کا فیصلہ ہم کریں گے کہ یہاں‌ سنیما گھر چلایا جاسکتا ہے یا نہیں۔

مرکزاسلامی کراچی کو سنیما گھر میں تبدیل کرنے سے متعلق سپریم کورٹ میں‌ از خود نوٹس کیس کی سماعت ايک ماہ کےلیے ملتوی ہوگئی۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔

کراچی میونسپل کارپوریشن (کے ایم سی) نے عدالت کو بتایا کہ مرکز اسلامی کی عمارت 1980ء میں میئر کراچی عبدالستار افغانی نے قائم کی، مرکزاسلامی میں نیو کلچر اینڈ کمیونٹی کمپلیکس کے قیام کے لیے متعلقہ حکام سے منظوری نہيں لی گئی۔

چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے برہم ہوتے ہوئے کہا کہ اسلامک سینٹر کو کیسے سنیما بنایا جاسکتا ہے، ہم فیصلہ کریں گے کہ کیا سنیما گھر چلایا جا سکتا ہے یا نہیں۔

عدالت کا کہنا تھا کہ کے ایم سی ایڈمنسٹریٹر متعلقہ حکام کے خلاف ایکشن لے سکتے ہیں۔ عدالت نے فنگامہ انٹرٹینمنٹ کمپنی سے تحریری جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ايک ماہ کےلیے ملتوی کردی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top