The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے مردم شماری سے متعلق حکومتی ٹائم فریم مسترد کردیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے مردم شماری سے متعلق حکومتی ٹائم فریم مسترد کردیا، ادارہ شماریات کو منصوبے کی تفصیلات عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

کس شہرمیں کتنےلوگ رہتے ہیں؟ بیمار کتنے ہیں، بےروزگار کتنے؟ مردم شماری کے بغیر کیسے معلوم ہوگا؟سپریم کورٹ نے محکمہ شماریات کو مردم شماری کیلئے منصوبے کی تفصیلات عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت عظمی نے مردم شماری سے متعلق حکومتی ٹائم فریم مسترد کرتے ہوئے استفسار کیا کہ مردم شماری کے بغیر ناخواندہ اور بےروزگار افراد کی درست تعداد کیسے بتائی جاسکتی ہے۔

جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے کہ یہ نہیں کہتے ایک دن میں مردم شماری کا عمل مکمل ہو جائے، جاننا یہ چاہتے ہیں کہ کام درست سمت میں ہورہا ہے یا نہیں؟درپیش مشکلات کی نشاندہی کی جائے۔

ڈائریکٹر شماریات آصف باوجوہ نے عدالت کو بتایا کہ کام مکمل ہے سیکیورٹی کے لئے فوج نومبر یا دسمبر کے بعد دستیاب ہوگی، اسی ضمن میں ڈی جی ملٹری سے آئندہ ہفتے میٹنگ ہوگی۔

ڈائریکٹر شماریات نےبتایا مردم شماری کےلئے ایک لاکھ پینسٹھ ہزار ٹیچرزکی تربیت کیلئے تین ماہ درکار ہیں،کیس پر مزید سماعت انیس اکتوبر کو ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں