The news is by your side.

Advertisement

سرکاری اسپتالوں میں عطیہ شدہ خون کی فروخت کا نوٹس

اسلام آباد: سرکاری اسپتالوں میں عطیہ کیے گئے خون کی فروخت پر سپریم کورٹ نے سخت برہمی کا اظہار کیا۔ چیف جسٹس کا کہنا ہے کہ عطیہ کیا گیا خون فروخت کرنا جرم ہے۔ اسپتالوں میں لاقانونیت کی اجازت نہیں دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اسپتالوں میں ناقص سہولتوں پر از خود نوٹس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے عطیہ کیے گئے خون کی فروخت پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔

چیف جسٹس نے اسپتالوں میں سرکاری دواؤں اور خون کی فروخت سے متعلق رپورٹ طلب کرلی۔

انہوں نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ انتظامیہ کے پالیسی معاملات میں مداخلت نہیں کر سکتے لیکن اسپتالوں میں لاقانونیت کی اجازت نہیں دیں گے۔

کیس کی مزید سماعت ایک ماہ کے لیے ملتوی کردی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں