The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نےلاہورکالج فارویمن یونیورسٹی کی وی سی کوعہدے سےفارغ کردیا

لاہور: سپریم کورٹ لاہور رجسٹری نے لاہورکالج فارویمن یونیورسٹی کی وائس چانسلر کو عہدے سے فارغ کرکے 30 روز کے اندر نیا وائس چانسلرتعینات کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس کی سربراہی میں لاہورکالج فارویمن یونیورسٹی میں وی سی کی میرٹ کے خلاف تقرری کے کیس کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے وائس چانسلر ڈاکٹرعظمیٰ کوعہدے سے فارغ کرکے 30 روز کے اندر نیا وائس چانسلر تعینات کرنے کا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ڈاکٹرعظمیٰ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ رپورٹ آپ کےخلاف آئی ہے، کسی کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونے دیں گے۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے ریمارکس دیے کہ یونیورسٹی میں سینئرپروفیسرکوایکٹنگ وائس چانسلر تعینات کیا جائے۔

نظام تعلیم کا بیڑاغرق کردیا، یہ ہے پنجاب حکومت کی کارکردگی‘ چیف جسٹس

خیال رہے کہ رواں سال 22 اپریل کو سپریم کورٹ نے سرکاری جامعات کے متعدد وائس چانسلرز کواستعفے دینے کی ہدایت کرتے ہوئے نئی سرچ کمیٹیاں قائم کرکے وائس چانسلرز کی جلد تعیناتیاں کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

چیف جسٹس نے سیکرٹری ہائر ایجوکیشن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر6 ہفتوں میں مستقل وائس چانسلر کی تعیناتی نہ ہوئی تو آپ ذمہ دار ہوں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں