The news is by your side.

کوئٹہ : 13 سالہ بچی سے زیادتی کے بعد قتل میں بھائی ملوث نکلا

کوئٹہ: تیرہ سالہ بچی سے زیادتی کے بعد لرزہ خیزقتل میں بھائی ملوث نکلا ، ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے جبکہ اس نے اعتراف جرم بھی کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے نواحی علاقے کیلی اسماعیل میں قتل ہونے والی تیرہ سالہ بچی کے قاتل کو گرفتار کرلیا گیا اور قاتل اور کوئی نہیں بھائی نکلا۔

ڈی آئی جی کوئٹہ نے بتایا کہ مقتولہ بچی طیبہ کے قاتل نے اعتراف جرم کرلیا ہے جبکہ خون کے نمونے اور دیگرشواہد فرانزک لیبارٹری بھجوا دیئے گئے ہیں۔

سول ہسپتال کوئٹہ کے ترجمان کے مطابق قتل سے قبل بچی سے جنسی زیادتی بھی کی گئی، پولیس سرجن منظور احمد کا کہنا تھا کہ بچی کا گلا گھونٹ کرقتل کیا گیا۔

پولیس حکام کے مطابق 13 سالہ طیبہ اپنے گھر میں اکیلی تھی جب نا معلوم افراد نے مبینہ طور اُس کے ساتھ زیادتی کی اور اُس کے بعد گلے میں دوپٹے سے پھندا ڈال کر اُسے ہلاک کردیا جبکہ ملزمان موقع سے فرار ہوگئے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے واقعہ کانوٹس لیتےہوئےدودن کےاندرملزمان کی گرفتاری کا حکم دیا تھا۔

یاد رہے کہ ظالم درندے نے تیرہ سال کی طیبہ کو زیادتی کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کیا اورلاش گھر کے صحن میں پھینک دی تھی۔


مزید پڑھیں : زینب قتل کیس کا مرکزی ملزم عمران گرفتار


خیال رہے کہ نئے سال 2018 کے پہلے مہینے جنوری میں کمسن بچیوں کے ساتھ زیادتی کے کئی واقعات ریکارڈ ہوئے ہیں جن میں قصور کی سات سالہ زینب اور مردان میں چار سالہ بچی اسماءکو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا تھا۔

ان دونوں واقعات کا چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے از خود نوٹس لے لیا ہے اور دونوں واقعا ت کے بارے میں پولیس حکام سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں