The news is by your side.

سوات امن کمیٹی کے سربراہ پر ہونے والے دھماکے میں اموات کی تعداد 8 ہو گئی

سوات: سوات میں امن کمیٹی کے سربراہ ادریس خان پر ہونے والے ریموٹ کنٹرول دھماکے میں مارے جانے والے افراد کی تعداد 8 ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختون خوا میں سوات کے علاقے برہ بانڈی میں دھماکے کے بعد مزید تین لاشیں برآمد ہو گئی ہیں، جس سے جاں بحق افراد کی تعداد آٹھ ہو گئی۔

دھماکا گزشتہ شام ہوا، جاں بحق افراد میں سربراہ امن جرگہ ادریس خان بھی شامل ہیں، دھماکے کی ایف آئی آر سی ٹی ڈی نے نامعلوم افراد کے خلاف درج کر لی، وزیر اعلیٰ کے پی محمود خان نے آئی جی پولیس سے رپورٹ طلب کر لی۔

اس سے قبل پولیس کا کہنا تھا کہ دھماکے میں 5 افراد جاں بحق ہوئے، جن میں ادریس خان کے 2 محافظ اور 2 پولیس اہل کار شامل ہیں، تاہم تین لاشیں صبح جائے وقوعہ سے ملیں جو عام راہگیروں کی معلوم ہوتی ہیں۔

وزیر اعلیٰ نے غمزدہ لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہدا کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی۔

ریموٹ کنٹرول دھماکے میں شہید ہونے والے ہیڈ کانسٹیبل رامبیل اور کانسٹیبل توحیداللہ کی نماز جنازہ جاوید اقبال شہید پولیس لائن سوات میں ادا کر دی گئی۔

جنازے میں ریجنل پولیس افسر ذیشان اصغر اور ڈی پی او سوات زاہد نواز مروت سمیت ایس پی لوئر سوات ارشد خان، ایس پی انوسٹیگیشن شاہ حسن، ایس پی اسپیشل برانچ پیر زربادشاہ سمیت دیگر پولیس افسران اور اہل کاروں نے شرکت کی، شہدائے پولیس کو پولیس کے چاق و چوبند دستے نے سلامی بھی دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں