سویڈش پارلیمنٹ میں وزیراعظم کے خلاف تحریکِ عدم اعتماد کامیاب -
The news is by your side.

Advertisement

سویڈش پارلیمنٹ میں وزیراعظم کے خلاف تحریکِ عدم اعتماد کامیاب

اسٹاک ہوم: یورپی ملک سویڈن کی پارلیمنٹ نے تحریکِ عدم اعتماد کے ذریعے اپنے وزیراعظم کو برطرف کردیا ، اس طریقے سے برطرف ہونے والے یہ پہلے سویڈش وزیراعظم ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسٹاک ہوم میں واقع سویڈش پارلیمنٹ میں سوشل ڈیموکریٹ پارٹی کے لیڈر اور منتخب وزیراعظم اسٹیفن لوف وین کے خلاف تحریک ِ عدم اعتماد پیش کی گئی، اسٹیفن نو ستمبر کو ہونے والے انتخابات کے نتیجے میں منتخب ہوئے تھے۔

پارلیمنٹ کے کل 349 ارکان میں سے 346 ارکان نے رائے شماری میں حصہ لیا۔ تین ارکان اجلاس میں موجود نہیں تھے ۔ وزیراعظم کی برطرفی کے حق میں 204 ووٹ پڑے جبکہ انہیں برقرار رکھنے کے حامی ووٹوں کی تعداد 142 تھی۔

رائے شماری میں سوشل ڈیموکریٹ اور گرین پارٹی نے وزیراعظم کے حق میں ووٹ دیا جبکہ ماڈریٹ، سینٹر ، لبرل، کرسچن ڈیموکریٹ اور سویڈن ڈیموکریٹ نامی جماعتوں نے وزیراعظم کے خلاف ووٹ دیا۔ اس موقع پر اپوزیشن اتحاد کی سب سے بڑی پارٹی یعنی ماڈریٹ پارٹی کے رہنما الف کرسٹریسن کا کہنا تھا کہ آج ہم اپنا انتخابات سے قبل کیا گیا وعدہ پورا کررہے ہیں۔

یاد رہے کہ اس سےقبل الیکشن کے بعد حکومت کی تشکیل سازی کے موقع پر دو دھڑے ابھر کر سامنے آئے تھے ، بائیں بازو کے بلاک نے 144 ووٹ جبکہ چار جماعتی اتحاد نے 143 ووٹ حاصل کیے تھے۔

ایوان میں تبدیلی کا سبب سوشل ڈیموکریٹس پارٹی کی جانب سے حکومت سازی کے بعد کرسچن ڈیموکریٹ اور ڈیموکریٹ پارٹی سے کیے جانے والے مذاکرات کے سبب عمل میں آیا ، لبرل اور سنٹر پارٹی نے اس ایما پر وزیراعظم سے اعتماد کا ووٹ واپس لیا کہ سوشل ڈیموکریٹ نے ان کی مرضی کے خلاف کچھ قوانین پر حزب اختلاف کی پارٹیوں سے ڈیل کی ہے جیسا کہ امیگریشن سے متعلق قوانین وغیرہ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں