The news is by your side.

Advertisement

منجمد اثاثوں کی بحالی، روس کے لئے اچھی خبر

برن: سوئس حکومت نے منجمد کئے گئے روسی اثاثے بحال کرنے کا گرین سنگل دے دیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق سوئس حکومت نے اطلاع دی ہے کہ عالمی پابندیوں کے تناظر میں 6.3 بلین سوئس فرانک مالیت کے روسی اثاثے منجمد کردئیے تھے،رپورٹ میں بتایا گیا کہ یہ اعدادوشمار سات اعشاریہ پانچ ملین سوئس فرانک سے زائد رقم ہے۔

سوئزرلینڈ اقتصادی امور ایجنسی کے سینیئر عہدیدار بولنگر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے عندیہ دیا کہ اگر ہمارے پاکس کوئی ٹھوس وجہ نہیں تو ہم روسی فنڈز کو منجمد نہیں کرسکتے۔

ادھر سوئزر لینڈ کی بینک لابی نے انکشاف کیا ہے کہ ملکی بینکوں کے پاس دو سو تیرہ بلین ڈالرز کی روسی دولت ہے،ان کا کہنا تھا کہ ان کے دو سب سے بڑے قرض نادہندہ یو بی ایس اور کریڈٹ سوئس، ہر ایک دولت مند روسی گاہکوں کے لئے دسویں ارب فرانک رکھتا ہے، ان اعداد وشمار سے پتہ چلتا ہے کہ صرف کریڈٹ سوئس نے ہی روسی کلائنٹس کی دس اعشاریہ چار بلین سوئس فرانک کی رقم کو منجمد کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: یورپی یونین سے متعلق روس کی بڑی پیشگوئی

یاد رہے کہ یوکرین پر روس کی چڑھائی کے بعد یورپ اور امریکا سمیت دیگر ممالک کی جانب سے روس پر پابندیاں عائد کی گئیں اسی ضمن میں سوئٹزرلینڈ اب تک روس کے 8 ارب ڈالر کے اثاثے منجمد کرچکا ہے۔

کچھ عرصے قبل سوئس حکام نے رپورٹ پیش کی تھی کہ انہوں نے تقریباً 5.75 ارب ڈالر کے روسی اثاثے منجمد کردیے ہیں اور اب اثاثوں کی تعداد بڑھ کر آٹھ ارب ڈالر تک پہنچ چکی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں