The news is by your side.

Advertisement

کیا آپ نے 24گھنٹوں تک بنا کچھ کھائے پیئے کبھی زندگی گذاری ہے، شامی بچی کا ٹرمپ سے سوال

شام : سات سالہ شامی بچی بانا العابد نے امریکی صدر سے سوال کیا ہے کہ کیا آپ نے کبھی 24گھنٹوں تک بنا کھانا اور پانی کے زندگی گذاری ہے۔

شام کی شہر حلب سے متواتر ٹوئٹس کرتے ہوئے توجہ کا مرکز بننے والی 7سالہ شامی لڑکی بانا العابد کی نئی ویڈیو سامنے آئی ہے، جس میں بانا نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ سے پوچھا ہے کہ ’کیا آپ نے کبھی 24گھنٹوں تک بنا کچھ کھانے اور بنا پانی کی زندگی گذاری ہے ؟ شام کے پناہ گزینوں اور ان کے بچوں کے بارے میں کچھ سوچیں‘۔

اس سے قبل بھی بانا العابد نے ٹرمپ کے ٹوئٹ کے جواب میں پوچھا تھا کہ ” کیا میں دہشت گرد ہوں؟”۔

ٹرمپ کا ٹوئٹ میں کہنا تھا کہ ممالک پر پابندی کا مقصد خراب لوگوں کو اپنے ملک سے باہر نکالنا ہے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل امریکی صدر ٹرمپ نے سات مسلم سمیت شام کے تارکین وطن کے امریکہ میں داخلے پر پابندی عائد کردی تھی۔

ٹرمپ کے حکم نامے کے فوری بعد بانا نے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ ”معزز ٹرمپ پناہ گزینوں پر پابندی عائد کرنا غلط بات ہے ، ہاں اگر صحیح ہے تو ‘ میرا پاس آپ کے لئے ایک تجویز ہے کہ دیگر ممالک کو پرامن بنائیں۔”

یاد رہے کہ سات سالہ شامی معصوم بچی بانا الاحد جو اس وقت بین الاقوامی سطح پر سب کی توجہ کا مرکز بن گئی تھی جب اُس نے ٹوئٹر کے ذریعہ شام کے شہر حلب میں جاری جنگ کاالمناک منظر پیش کیا تھا۔

بانا العابد اپنی ماں فاطمہ کی مدد سے شام کے شہر حلب سے جنگ کے دوران جذبات ٹوئٹس کرتی رہی ہیں اور اس کے ٹوئٹر پر 366,000 فالووورز ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں