ٹی ٹین کوئی کرکٹ لیگ نہیں، ایسے فارمیٹ سے مطمئن نہیں، سابق کرکٹرز
The news is by your side.

Advertisement

ٹی 10 کوئی کرکٹ لیگ نہیں، ایسے فارمیٹ سے مطمئن نہیں، سابق کرکٹرز

اسلام آباد: سابق پاکستانی کرکٹر آصف اقبال نے کہا ہے کہ کھیل میں کرپشن کے معاملات پر کھلاڑیوں کو ایجوکیٹ کرنا چاہئے، اگر اس قسم کی لیگز ہوتی ہیں تو انہیں آئی سی سی کو مانیٹر کرنا چاہئے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، سابق کرکٹر آصف اقبال نے کہا کہ رجسٹرڈ لیگز کھیلنے والوں کا باقاعدہ ریکارڈ مرتب کیا جاتا ہے، غیر رجسٹرڈ لیگز کھیلنے والوں کا کوئی ریکارڈ مرتب نہیں کیا جاتا۔

انہوں نے کہا کہ لیگز کھیلنے والے پلیئرز کی بولنگ، بیٹنگ کا ریکارڈ مستقبل میں کام آتا ہے، ٹی ٹین کوئی کرکٹ لیگ نہیں، ایسے فارمیٹ سے مطمئن نہیں ہوں، آئی سی سی کو اس قسم کی کرکٹ لیگز کو دیکھنا چاہئے، اس قسم کی کرکٹ لیگز سے ورلڈ کلاس لیگز کو نقصان ہوتا ہے، کل تو کوئی بھی کسی بھی قسم کی لیگ شروع کراسکتا ہے۔

آصف اقبال نے کہا کہ اس قسم کی کرکٹ لیگز سے کھلاڑیوں کو تو فائدہ ہوتا ہے، کھلاڑی تو پیسے بناتے ہیں لیکن اوریجنل کرکٹ کو نقصان ہوتا ہے، فل ممبرز بورڈ نہ ہونے سے میچ فکسرز بھی اس قسم کی لیگز سے فائدہ اُٹھاتے ہیں۔

دوسری جانب سابق فاسٹ بولر سرفراز نواز نے آئی سی سی سے سوال کرتے ہوئے کہا کہ بتایا جائے کہ کرکٹ اینٹی کرپشن یونٹ نے ٹی ٹین لیگ پر کیا کام کیا ہے۔

واضح رہے کہ چیئرمین پی سی بی احسان مانی کا کہنا تھا کہ ہمیں خدشہ ہے کہ اس طرح کی لیگز میں ہمارے کھلاڑی غلط استعمال ہوسکتے ہیں، ورلڈ کپ سے قبل پاکستانی کھلاڑیوں کو تحفظ دینا ضروری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں