کالعدم تنظیمیں کھلے عام جلسے کررہی ہیں، طاہر مشہدی -
The news is by your side.

Advertisement

کالعدم تنظیمیں کھلے عام جلسے کررہی ہیں، طاہر مشہدی

اسلام آباد : ایم کیو ایم پاکستان کے سینیٹر طاہر مشہدی نے کہا ہے کہ حکومت نے قومی ایکشن پلان کو نان ایکشن پلان بنادیا ہے جس سے لگتا ہے کہ حکومت اس پر عمل درآمد نہیں کرانا چاہتی، کالعدم تنظیمیں کھلے عام جلسے کررہی ہیں۔

ایم کیو ایم سے تعلق رکھنے والے سینیٹر طاہر مشہدی سینیٹ کے اجلاس سے خطاب کررہے تھے انہوں نے کہا کہ حکومت نے قومی ایکشن پلان کونان ایکشن پلان بنا کر پسِ پُشت ڈال دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی ایکشن پلان میں واضح ہدایات کے باوجود نہ تو نیکٹا کوفنڈز اور اسٹاف دیا گیا اور نہ ہی اب تک نفرت انگیز مواد کی کھلےعام تقسیم کو روکا جا سکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اچھی اور بری کالعدم تنظیموں کی اصطلاح سمجھ سے بالاتر ہے جب کہ مجرموں کو بلا امتیاز جرم کی پاداش میں سزا دیے بغیر دہشت گردی کا خاتمہ ممکن نہیں۔

سینیٹر طاہر مشہدی نے کہا کہ ملک میں کالعدم تنظیمیں کھلےعام جلسےکرتی ہیں اور انتہا پسند تنظیمیں چندہ جمع کرتی ہیں جب کہ سیاسی جماعتیں اپنا جلسہ تک نہیں کر سکتیں۔

انہوں نے کہا کہ کالعدم تنظیمیں دفاع پاکستان کونسل جیسے نئے ناموں سےکام کر رہی ہیں اور دیگر جماعتیں بھی ہیں جو نام بدل بدل کر کام کر رہی ہیں لیکن کوئی روکنے والا نہیں۔

سینیٹر طاہر مشہدی نے کہا کہ کراچی کا مسئلہ گھمبیر اور ہمہ جہت ہے اسے مقامی لوگوں کو بااختیار کیے بغیر حل کرنا ناممکن ہے اس لیے مقامی پولیس ، درست مردم شماری اور مینڈیٹ کا احترام کیے بغیر پر امن کراچی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں