The news is by your side.

Advertisement

جمشید دستی گرفتاراورماڈل ٹاؤن کے قاتل آزاد ہیں، طاہرالقادری

لاہور: سربراہ پاکستان عوامی تحریک طاہر القادری نے کہا ہے کہ ملک میں دہرا قانون رائج ہے چنانچہ جمشید دستی گرفتار ہیں اور ماڈل ٹاؤن کے سفاک قاتل آزاد ہیں۔

وہ جمشید دستی کی گرفتاری اور دوران حراست تشدد کرنے پر ردعمل دے رہے تھے ابہوں نے کہا کہ اگر جمشید دستی سرمایہ دارہوتے تو پنجاب پولیس اس کی محافظ ہوتی لیکن چونکہ اُن کا تعلق متوسط طبقے سے ہے اس لیے انہیں ٹارچر کیا جا رہا ہے۔

علامہ طاہرالقادری نے کہا کہ موجودہ حکمراں تھانہ کچہری کی انتقامی کارروائیوں کے کلچر کے بانی ہیں جنہوں نے اپنے ہر مخالف پر جعلی مقدمے بنائے اور پولیس کو اپنی ذاتی فورس کی طرح مخالفین کوکچلنے کے لیے استعمال کیا۔


 *قید میں شدید تشدد کیا جارہا ہے، 6 دن سے بھوکا ہوں: جمشید دستی 


انہوں نے کہا کہ جمشید دستی کےخلاف انتقامی کارروائیوں کی مذمت کرتے ہیں اور پاکستان عوامی تحریک اس ظلم کے خلاف جمشید دستی کے ہمراہ کھڑی ہے کیوں ہم ماڈل ٹاؤن کے شہداء کے ورثاء ہیں اور حکومتی مظالم کے شکار ہیں۔

ڈاکٹرطاہرالقادری نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے لندن میں جے آئی ٹی کے خلاف تقریر کی لیکن اس اشتعال انگیز گفتگو پر کارروائی نہیں کی گئی جب کہ معصوم اور بے گناہ اراکین اسمبلی تک کو جیل میں ٹھونس دیا جاتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں