site
stats
لائف اسٹائل

پاکستان کا نام دنیا بھر میں روشن کرنے والا باکمال مصور

مصوری اقوام کی تہذ یب و تمدن پرکھنے میں اہم کردار ادا کرتی ہےمصوری نہ صرف کسی ملک کی ثقافتی، سماجی اور مذہبی حالات کی عکاسی کرتی ہے بلکہ اس سے معاشرتی اتار چڑھاوں کا بھی بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ درحقیقت مصوری ایک تصوری زبان ہے۔

مصوری ایک خداداد صلاحیت ہے۔ اس سیارے کا ہر انسان اپنے اندارکوئی نہ کوئی صلاحیت لیے پیدا ہوتا ہےلیکن جب بچہ اس دنیا میں آنکھ کھولتا ہے تو وہ بچپن کے اس لا شعوری دور میں اس بات کو جانے سے قاصر ہوتا ہے کہ وہ کن صلاحیتوں کا حامل ہے۔

علی ساجد کا تعلق پٹھان قبیلہ یوسفزئی سے ہے اور پشاور کا رہائشی ہے۔ علی بچپن سے پڑھائی میں دیگر بچوں کی طرح  لائق نہ تھااور نہ ہی اس کے تعلیمی نتائج قابلِ داد تھے۔ گھر والوں کی جانب سے امتحانات میں اچھے نمبر نہ آنے پرعلی کو ڈانٹ اور تنقید کا سامنا کرنا پڑتا تھا، چھٹی کلاس کےامتحانات میں بھی نتیجہ اچھا نہ آیا مگرعلی کی استانی نیئرنگار نےاس کی پوشیدہ خداداد صلاحیت فن مصوری کو اجاگر کیا جس کوعلی نے اپنا مقصد حیات بنا لیا۔

POST 1

علی نے ایف ایس سی کا امتحان پاس کرنے کے بعد استانی کے مشورے پرعمل اور اپنی صلاحیت پر بھروسہ کرتے ہوئے پشاور یونیوسٹی کے شعبہ فائن آرٹس میں داخلہ لیا اور مصوری کے شعبوں میں سے آبرنگ مصوری کے شعبہ کا انتخاب کیا،اور دیکھتے ہی دیکھتے سکول میں پڑھائی کا یہ کمزور بچہ سال 2003کی انڈرگرایجویشن مقابلےمیں سونے کا تمغہ جیت گیا۔

گریجوئشن مکمل کرنے کے بعد آبرنگ مصوری کی مزید پڑھائی کے لیےعلی نے 2006 میں بیرون ملک کا رخ کیا،پہلے سنگاپور اورپھر جاپان میں مختلف کورسز مکمل کرنے کے بعد 2013 میں پاکستان وآپس لوٹ آیااور باقاعدہ آبرنگ مصوری کا آغاز کیا۔

POST 5

POST 2

ہر سال کی طرح گزشتہ سال بھی اٹلی کے شہر فیبریانوں میں فیبریانوں انکیرلو(fabriano aquarelle) کی مصوری نمائش منقعد ہوئی جس میں دنیا بھر سے تعلق رکھنے والے مصوروں نے شرکت کی۔ اس سال مصوری نمائش کے موقع پر دنیا بھر سے آئے مصوروں کیلے ایک مقابلے کا انقعاد کیا گیا تھا۔

POST 8

آبرنگ مصوری دیگر مصوری کے شعبوں سے مشکل اور چیلنجنگ ہے کیونکہ اس میں رنگوں کی شفاف طے ہوتی ہے جو نظر آتی ہے لحاظ آبرنگ مصوری میں غلطی کی گنجائش نہیں۔

مقابلے کو کٹھن بنانے کیلے انتظامیہ نے اسی وقت مقابلے کے لیے نئے قواعد و ضوابط بنائے اور مصوری کا عنوان اوپن رکھا تا کہ جس کا جو دل چاہے پینٹ کرسکے۔

POST 7

تین گھنٹے کے مقابلے میں علی نےحسین رنگوں کے امتزاج کے ساتھ عقب میں واقع ایک قدیم دروازہ جو کہ سورج کی شعاعوں میں دلکش نظارہ پیش کر رہا تھا اور وہاں آئے سیاحوں کو اپنی طرف متوجہ کیے ہوئے تھا آبرنگ مصوری میں کچھ ایسا پینٹ کیا کہ پہلے انعام کا حقدار ٹہرا۔

POST 9

علی نےفیبریانوں انکیرلو میں ڈینیل اسمتھ ایوارڈ جیت کرپاکستان کا نام شعبہ مصوری کے ذریعےدنیا بھر میں مقبول کیا۔ اقوام متحدہ نے بھی علی کی آبرنگ مصوری کو سہراتے ہوئے اس کی پینٹگ کو اپنے دنیا میں جاری امن کے مشن کا حصہ بنایا۔

POST 4

آج کل جو دنیا بھر میں دہشت گردی کی لہر چل رہی ہے اس کو قلم،برش اور فن مصوری کے ذریعے ہی مات دی جا سکتی ہیں۔ مصوری ایک ایسا فن ہے جس سے لوگوں کی منفی سوچ کو مثبت میں تبدیل کیا جا سکتا ہے اور دینا بھر میں پاکستان کی سوفٹ ایمج کو اجاگر کیا جا سکتا ہے، علی نے اے آر واے نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا۔

علی ساجدنے مصوری کواپنا مقصد حیات بنایا ہے اور اب ہانگ کانگ میں منقعدہونے والےمقابلے کے لیے تیاری کر رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top