The news is by your side.

Advertisement

طالبان کی افغانستان میں اہم تقرریاں

قطر : طالبان کی جانب سے افغانستان میں اہم تقرریاں کردی گئیں ، جس میں انٹیلی جنس چیف، وزیرداخلہ ، وزیرخزانہ، ہائیرایجوکیشن کےسربراہ سمیت مرکزی بینک کے سربراہ کا تقرر شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان میں طالبان کی جانب سے تقرریوں کا عمل شروع کردیا گیا ، جس کے پیش نظر طالبان نے انٹیلی جنس چیف، وزیرداخلہ ، وزیرخزانہ، ہائیرایجوکیشن کےسربراہ سمیت مرکزی بینک کے سربراہ کا تقرر کردیا۔

ترجمان طالبان سہیل شاہین نے اپنے بیان میں کہا کہ نجیب اللہ کا انٹیلی جنس چیف تعینات کیا گیا جبکہ صدرابراہیم کو وزیرداخلہ اور گل آغا کو وزیرخزانہ اور سخاواللہ کو سربراہ محکمہ تعلیم مقرر کردیا گیا ہے۔

سہیل شاہین نے بتایا کہ عبدالباقی کو ہائیرایجوکیشن کا سربراہ ، حمداللہ نعمانی کو میئرکابل اور ملاشیریں کو گورنر کابل تعینات کردیا گیا ہے۔

طالبان نے حاجی محمد ادریس المعروف ملا عبدالقہار کو افغانستان کے مرکزی بینک کا قائم مقام سربراہ مقرر کیا ہے نئے سربراہ نے عملے کو فوری طور ملازمتوں پر واپسی کی ہدایت کردی ہے۔

خیال رہے طالبان کی جانب سے مرکزی بینک کے سربراہ کی تقرری ایسے وقت کی گئی ہے جب امارت اسلامی افغانستان کےاعلان کے باوجود بینک نہیں کھل سکے ، بینکوں کے سامنے عوام کا رش ہے اور شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

افغان شہری کا کہنا ہے کہ اشیائےخوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا ہے، پیسے ختم ہوگئے ہیں گھر کے لیےسودا سلف نہیں خرید سکتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں