The news is by your side.

Advertisement

طالبان نے افغان حکومت سے بات چیت کی افواہیں مسترد کردیں

کابل: طالبان نے افغانستان میں قیام امن کے لیے افغان حکومت سے مذاکرات کی خبروں کی تردید کردی۔

تفصیلات کے مطابق حالیہ دنوں میں طالبان اور افغان حکومت کے درمیان مذاکرات کی خبریں گردش کررہی تھیں، تاہم طالبان نے افواہیں قرار دیتے ہوئے خبروں کی تردید کردی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ طالبان نے متعدد بار افغان حکومت کو کٹھ پتلی قرار دیتے ہوئے ہمیشہ ان سے مذاکرات سے انکاری رہے ہیں۔

قبل ازیں روس میں ہونے والے مذاکرات میں بھی طالبان نے افغان حکومت کو شامل کرنے سے انکار کردیا تھا، بعد ازاں حکام نے اپوزیشن رہنماؤں کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

طالبان نے اپنے ایک بيان ميں واضح کيا کہ مذاکرات کے تازہ دور ميں افغانستان سے غير ملکی افواج کے انخلاء اور ديگر تنازعات پر بات چيت جاری ہے۔

علاوہ ازیں اسی ہفتے امريکی محکمہ خارجہ کے ترجمان روبرٹ پالاڈينو نے عنديہ ديا تھا کہ طالبان اور کابل حکومت کے درمیان مذاکرات زير غور ہيں۔

افغان طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکرات کا مقصد افغان میں گزشتہ 17 سال سے جاری جنگ کا خاتمہ اور افغانستان سمیت خطے کے دیگر ممالک میں امن و امان کا قیام ہے۔

امریکی سینیٹ میں افغان جنگ کے خاتمے کا بل پیش

امریکا نے افغانستان سے اپنی فوج کے انخلاء کا اعلان کیا ہے جبکہ طالبان کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ افغان طالبان افغانستان سے داعش کا چند دنوں میں خاتمہ کرسکتے ہیں۔

یاد رہے کہ امریکی سینیٹ میں افغان جنگ کے خاتمے کا بل پیش کیا جاچکا ہے، جس کے ذریعے امریکا افغانستان میں اپنی فتح کا اعلان کرے گا اور 45 روز میں فوجی انخلا کا لائحہ عمل طے کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں