The news is by your side.

افغانستان: طالبان کا دہشت گرد حملہ، 20 سے زائد فوجی اہلکار ہلاک

کابل: افغانستان میں طالبان کے دہشت گرد حملے کے نتیجے میں پولیس اہلکاروں سمیت 20 سے زائد فوجی اہلکا ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق افغان صوبے بادغیس میں قائم فوجی اڈے پر طالبان نے حملہ کردیا جس کے باعث پولیس اہلکاروں سمیت بیس سے زائد فوجی مارے گئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ حکام نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے، جس وقت حملہ کیا گیا اس وقت تقریباً 600 کے قریب سیکیورٹی اہلکار اڈے میں موجود تھے۔

افغان طالبان کی جانب سے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی گئی جبکہ اس حملے کو فوجی چھاؤنی پر ایک بڑا حملہ تصور کیا جارہا ہے اور ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

یہ حملہ ایسی صورت حال میں کیا گیا ہے کہ جب طالبان اور امریکی نمائندے زلمے خلیل زاد کے درمیان مذاکراتی دور جاری ہے اور فریقین کی جانب سے مثبت تاثرات سامنے آرہے ہیں۔

حال ہی میں امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان امن عمل زلمے خلیل زاد نے افغانستان کا دورہ کیا تھا اس دوران اہم ملاقاتیں عمل میں آئی تھیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز افغانستان میں امریکی ڈرون حملے میں داعش خراسان کا اہم رہنما مولوی سلیمان چار ساتھیوں کے ہمراہ مارا گیا تھا۔ جبکہ طالبان کا حملہ جوابی کارروائی ہوسکتی ہے۔

افغانستان میں امریکی ڈرون حملہ، داعش کے اہم رہنما سمیت 4 جنگجو ہلاک

یاد رہے کہ گذشتہ دنوں افغانستان میں طالبان جنگجوؤں کے حملے میں 8 پولیس اہلکار ہلاک جبکہ 4 زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں