شادی سے انکار پر 19 سالہ لڑکی کو قتل کرنے والا مرکزی ملزم گرفتار -
The news is by your side.

Advertisement

شادی سے انکار پر 19 سالہ لڑکی کو قتل کرنے والا مرکزی ملزم گرفتار

جامشورو: صوبہ سندھ کے ضلع جامشورو کے شہر سیہون میں رشتے سے انکار پر قتل کی جانے والی 19 سالہ لڑکی کے مجرم کو گرفتار کرلیا گیا۔

سیہون پولیس کے مطابق تانیہ خاصخیلی کے قتل کا مرکزی ملزم خان محمد نوہانی ایک با اثر خاندان سے تعلق رکھتا تھا۔ پولیس نے ملزم کو بلوچستان کے علاقے داریجو سے گرفتار کیا۔

اس سے قبل پولیس نے جامشورو کے گاؤں نگاول میں بھی چھاپہ مار کر 2 خواتین سمیت 15 افراد گرفتار کیے۔

یاد رہے کہ یہ واقعہ سیہون کے جھانگار گوٹھ میں رواں ماہ کے آغاز میں پیش آیا تھا جب 19 سالہ تانیہ خاصخیلی کو بااثر خاندان سے تعلق رکھنے والے خان محمد نوہانی نے خود ہی اپنا رشتہ بھیجا لیکن تانیہ اور اس کے خاندان کی جانب سے انکار کردیا گیا۔

انکار کے 2 روز بعد ملزم نے اپنے 2 ساتھیوں کے ہمراہ تانیہ کے گھر پر حملہ کیا اور تمام اہلخانہ کو ایک کمرے میں بند کر کے تانیہ کو اغوا کرنے کی کوشش کی، تاہم تانیہ کی بھرپور مزاحمت پر ملزمان اسے گولی مار کر فرار ہوگئے۔

تانیہ کے بہیمانہ قتل کے خلاف پورے گاؤں میں احتجاج شروع ہوگیا جس کے بعد پولیس حرکت میں آئی اور چند غیر متعلقہ افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔

تاہم تانیہ کے خاندان کا مطالبہ تھا کہ مرکزی ملزم خان محمد نوہانی کو گرفتار کر کے اسے کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

بیٹی کے قاتلوں پر رحم نہیں کریں گے، سزا دی جائے، والدہ، بہن

اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے تانیہ کی والدہ نے کہا کہ بیٹی کے قاتلوں کو معاف نہیں کروں گی، اس کے قاتلوں کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔

مقتولہ تانیہ کی بہن نے کہا کہ قاتل نے میری بہن پر رحم نہیں کیا ہم بھی قاتل پر رحم نہیں کریں گے۔


وزیر اعلیٰ سندھ کی آمد

چند روز قبل وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بھی سیہون کا دورہ کیا اور تانیہ کے خاندان سے ملاقات کی۔ یاد رہے کہ مذکورہ گاؤں وزیر اعلیٰ سندھ کے انتخابی حلقے میں شامل ہے۔

وزیر اعلیٰ نے تانیہ کے خاندان کو فراہمی انصاف کی مکمل یقین دہانی کروائی اور اس سلسلے میں پولیس کو بھی ہدایات جاری کیں جس کے بعد آج پولیس نے مرکزی ملزم کو گرفتارکرلیا۔

ادھر چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ نے بھی تانیہ قتل کیس کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی حیدر آباد اور ایس ایس پی دادو کو 19 ستمبر کو سندھ ہائیکورٹ میں طلب کرلیا ہے۔


سندھ اسمبلی میں قرارداد

سیہون کی تانیہ خاصخیلی کے قتل کے خلاف آج سندھ اسمبلی میں مسلم لیگ ن کے رکن صوبائی اسمبلی سورٹھ تھیبو نے قرارداد بھی جمع کروائی۔

قرارداد میں مطالبہ کیا گیا کہ تانیہ خاصخیلی کے قاتلوں کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے اور سندھ حکومت تانیہ کے قاتلوں کو کیفر کردار تک پہنچائے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں