سابق سیکریٹری خزانہ طارق باجوہ گورنر اسٹیٹ بینک مقرر -
The news is by your side.

Advertisement

سابق سیکریٹری خزانہ طارق باجوہ گورنر اسٹیٹ بینک مقرر

اسلام آباد: سابق سیکریٹری خزانہ اور سابق چیئرمین ایف بی آر طارق باجوہ کو گورنر اسٹیٹ بینک تعینات کردیا ہے جس کا نوٹیفیکشن جاری کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے سابق سیکریٹری خزانہ اور سابق چیئرمین ایف بی آر طارق باجوہ کو گورنر اسٹیٹ بینک تعینات کردیا ہے۔ صدر ممنون حسین نے ان کی تقرری کی منظوری دے دی ہے جبکہ ان کی تقرری کا نوٹیفیکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ 2 روز قبل وزیر اعظم کی صاحبزادی مریم نواز کی جے آئی ٹی میں پیشی کے موقع پر غیر یقینی سیاسی صورتحال کی وجہ سے راتوں رات ڈالر کی قیمت 4 روپے 20 پیسے تک بڑھ گئی تھی۔

مزید پڑھیں: ڈالر 109 روپے تک جا پہنچا

قیمت میں اضافے کے بعد انٹر بینک میں ڈالر کو ساڑھے تین روپے اضافے کے ساتھ 108 روپے 30 پیسے میں فروخت کیا گیا۔ اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر 109 روپے 50 پیسے کے حساب سے فروخت کیا گیا۔

ڈالر کی قیمت میں اضافے کے بعد وفاقی وزیر خزانہ اسحٰق ڈار نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا عندیہ دیا تھا۔

مزید پڑھیں: اسحٰق ڈار کا ڈالر کی قیمت میں اضافہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا عندیہ

انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ اسٹیٹ بینک کا مستقل گورنر مقرر کیا جائے گا جس کے تحت آج نئے گورنر کی تقرری عمل میں لائی گئی ہے۔

گزشتہ روز اسٹیٹ بینک کی گورنر کے عہدے پر 2 نام وزیر اعظم کو ارسال کیے گئے تھے جن میں سے ایک طارق باجوہ کا جبکہ دوسرا ڈاکٹر وقار مسعود کا تھا جو سابق سیکریٹری خزانہ اور اسٹیٹ بینک بورڈ کے رکن رہ چکے ہیں۔

طارق باجوہ، محکمہ شماریات کے سربراہ آصف باجوہ کے بھائی ہیں جبکہ ان کے ایک اور بھائی ارشد باجوہ بھی رورل سپورٹ پروگرام کے سربراہ ہیں۔

یاد رہے کہ گورنر اسٹیٹ بینک کی تعیناتی 3 سال کے لیے ہوتی ہے۔ اپریل میں اشرف وتھرا کے سبکدوش ہونے کے بعد سے ڈپٹی گورنر ریاض الدین ریاض قائم مقام گورنر اسٹیٹ بینک کی ذمہ داریاں نبھا رہے تھے۔


Comments

comments

یہ بھی پڑھیں