The news is by your side.

تسنیم حیدر کی ارشد شریف قتل کیس میں طلبی کا نوٹس موصول ہونے کی تصدیق

لندن : مسلم لیگ ن کے ترجمان لندن ہونے کے دعویدار تسنیم حیدر نے ارشد شریف قتل کیس میں طلبی کا نوٹس موصول ہونے کی تصدیق کردی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے ترجمان لندن ہونے کے دعویدار تسنیم حیدر کو ایف آئی اے کا نوٹس موصول ہوگیا۔

تسنیم حیدر شاہ کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے کا نوٹس اپنے وکیل کو بھیج دیا ہے، وکیل کے مشورے کے مطابق بیان ریکارڈ کرانے کو تیار ہوں۔

ن لیگی ترجمان نے کہا کہ مقدمات کے سبب پاکستان نہیں جا سکتا، میرے وکیل نے مشورہ دیا تو پاکستان جانے کو بھی تیار ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ وکیل نے کہا ہے میرے دفتر یا ہائی کمیشن میں بیان ریکارڈ کرانے کا بندوبست کروں گا، میں ارشدشریف قتل،عمران خان پر حملے سے متعلق بیانات پرقائم ہوں۔

گذشتہ روز سینئر صحافی ارشد شریف کی شہادت کے معاملے پر ایف آئی اے نے لیگی رہنما تسنیم حیدر کو طلب کرتے ہوئے نوٹس جاری کیا تھا۔

ایف آئی اے کی دو رکنی فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کی جانب سے تسنیم حیدر کو نوٹس جاری کیا تھا ، جس میں لیگی رہنما کو 29 نومبر کو طلب کیا گیا تھا۔

یاد رہے تسنیم حیدر نے صحافی ارشد شریف کے قتل سے متعلق کچھ دن پہلے لندن میں پریس کانفرنس کی تھی۔

تسنیم حیدر شاہ نے دعویٰ کیا تھا کہ عمران خان پر حملہ اور صحافی ارشد شریف کے قتل کی سازش لندن میں ہوئی، نواز شریف کے ساتھ حسن نواز کے دفتر میں 3 ملاقاتیں ہوئیں، مجھے میٹنگ کے لیے بلا کر بتایا گیا کہ ارشد شریف اور عمران خان کو قتل کرنا ہے۔

تسنیم حیدر نے بتایا تھا کہ پہلی میٹنگ 8 جولائی، دوسری 20 ستمبر اور تیسری 29 اکتوبر کو ہوئی، مجھ کہا گیا کہ نئے آرمی چیف کی تقرری سے پہلے ارشد شریف اور عمران خان کو راستے سے ہٹانا ہے، ناصر بٹ نے نواز شریف سے میرا تعارف گجرات کے مضبوط شخص کے طور پر کرایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں