site
stats
بزنس

ایک سال میں دوسرا بجٹ، 313 درآمدی اشیاء پر ڈیوٹی میں اضافہ

اسلام آباد: حکومت نے منی بجٹ پیش کردیا، وزیر اعظم نے تین سو تیرہ اشیاء پر ریگیولیٹری ڈیوٹی میں اضافے کی اصولی منظوری دے دی، ایف بی آر کی جانب سے نوٹیفیکشن دو روز میں جاری ہونے کا امکان ہے.

حکومت نے ٹیکس ہدف پورا کر نے اور آئی ایم ایف کو خوش کرنے کیلئے یہ فیصلہ کیا ہے، ٹیکس خسارے سے بچنے کیلئے آنے والے سات ماہ کے دوران درآمدی اشیاء پر ریگولیٹری ڈیوٹی کا سہارا لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

جن اشیاء پر ریگولیٹری بڑھائی جاسکتی ان میں دہی، مکھن، ڈیری مصنوعات، پنیر، درآمدی پھل ،سبزیاں، پاستا اور میکرونی، ،خشک میوہ جات، سفید چاکلیٹ، بسکٹ، ٹماٹرکا پیسٹ، آئس کریم، ہر قسم کے بیوریجز، پرفیوم ،میک اپ کا سامان، شیمپوز،ٹوتھ پیسٹ، صابن آٹو پارٹس کا اسکریپ اور دیگر اشیاء شامل ہیں۔

اس کے علاوہ الیکٹرانک کا سامان ، ایل سی ڈییز ، جینیرٹرز اور اے سیز پر بھی ڈیوٹی میں اضافہ کیا جائے گا۔

حکومت کو رواں مالی سال کے دوران ٹیکس وصولیوں میں چالیس ارب روپے کی کمی کا سامنا ہے.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top