site
stats
پاکستان

طیبہ کے والدین نے مقدمہ واپس لینے کی درخواست جمع کروادی

اسلام آباد: طیبہ تشدد کیس میں والد اور والدہ نے ملزمان کے خلاف مقدمہ واپس لینے کے لیے بیان حلفی جمع کرادیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں مالکن کے تشدد کا نشانہ بننے والی طیبہ کے والدین نے ملزمان کے خلاف مقدمہ واپس لینے کے لیے بیان حلفی جمع کرادیا۔

والدین نے بیان حلفی میں مؤقف اختیار کیا کہ غربت کی وجہ سے انہوں نےطیبہ کو راجا خرم کے حوالےکیا، طیبہ سابق ایڈیشنل جج  کے گھر سے لاپتہ ہوئی توانہوں نےفون پر اطلاع دی۔

پڑھیں: ’’ طیبہ تشدد کیس: سپریم کورٹ کا ماتحت عدالت میں ٹرائل روکنے کا حکم ‘‘

والدین کا کہنا کے کہ راجاخرم علی کے خلاف سازش کےتحت مقدمہ درج کرایاگیا، راجاخرم علی اوران کی اہلیہ ماہین ظفر بےگناہ ہیں، اس لیے اُن دونوں کومعاف کرتے ہیں اور مقدمے کی مزید پیروی نہیں کرنا چاہتے۔

یہ بھی پڑھیں: ’’ طیبہ تشدد کیس، سپریم کورٹ کا طیبہ کو ایس او ایس ولیج بھجوانے کا حکم ‘‘

یاد رہے گزشتہ برس اسلام آباد میں ایڈیشنل جج کی اہلیہ نے گھریلو ملازمہ طیبہ پر تشدد کیا تھا، اے آر وائی پر خبر آنے کے بعد  پولیس نے بچی کو تحویل میں لیا اور مقدمہ درج کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top