The news is by your side.

Advertisement

رجب طیب اردگان کے فیصلے سے خلافت عثمانیہ کے دور کی یاد تازہ ہوگئی، پرویز الہیٰ

لاہور: اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہیٰ نے کہا کہ رجب طیب اردگان کے فیصلے سے خلافت عثمانیہ کے دور کی یاد تازہ ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الٰہی نے ترک صدر رجب طیب اردگان کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ 15ویں صدی کی یادگار مسجدکی دوبارہ بحالی ترک صدر کا جراتمندانہ فیصلہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ طیب اردگان کے فیصلے سے خلافت عثمانیہ کے دور کی یاد تازہ ہوگئی ترک صدر کو مسجدکا درجہ بحال کرنے پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

پرویز الہیٰ کا کہنا تھا کہ آیا صوفیہ مسجددنیا بھر کے مسلمانوں کا ثقافتی ورثہ ہے،1453میں سلطان محمدفاتح دوئم کے دور میں قائم مسجد کو 1935 میں میوزیم بنایاگیا تھا۔

آیا صوفیہ میوزیم سے مسجد میں تبدیل

یاد رہے کہ گزشتہ روز ترک صدر رجب طیب اردگان نے 1934 میں مصطفیٰ کمال اتا ترک کی جانب سے میوزیم میں تبدیل کی گئی آیا صوفیہ مسجد کو عدالتی فیصلے بعد بحال کرتے ہوئے نماز کے لیے کھولنے کا اعلان کیا تھا۔

ترک صدر نے مقبوضہ بیت المقدس میں یہودیوں کے لیے بنائے ٹیمپل ماؤنٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ یہودی اورعیسائی بھی تو مسلسل مسجدالاقصیٰ کو نشانہ بنا رہے ہیں جو خاموش رہتے ہیں اور آیا صوفیہ مسجد پر تجویز کی جرات نہیں کرسکتے انہیں یاد رکھنا چاہیے کہ آیا صوفیہ کو مسجدمیں تبدیل کرنا ترکی کا حق ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں