آٹھ سالہ طالبہ کا اسکارف اتارنے والا ٹیچر نوکری سے فارغ Hijab
The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں ٹیچر نے بچی کا حجاب پھاڑ دیا، نوکری سے برطرف

واشنگٹن: امریکا کے ایک نجی اسکول میں بچی کی معمولی غلطی پر ٹیچر نے طالبہ کو تشدد کا نشانہ بنایا اور اُس کا حجاب پھاڑ دیا، اسکول انتظامیہ نے متعلقہ ٹیچر کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ٹیچر کو نوکری سے فارغ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکا کے نجی تعلیمی ادارے بیننگٹن اسکول میں ٹیچر نے بغیر اجازت نشست سے اٹھنے پر 8 سالہ طالبہ پر بدتمیزی کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے اُسے سیٹ سے کھڑا کیا اور اُس پر تشدد کرتے ہوئے بازو سے پکڑ کر کھینچا جس کے نتیجے میں بچی کی آنکھ میں چوٹ لگی اور اسکارف پھٹ گیا۔

واقعے کی اطلاع پولیس کو ملی تو متعلقہ ٹیچر کے خلاف تحقیقات کا آغاز کیا، اوگہین ایدھا (ٹیچر) نے تفتیش میں مؤقف اختیار کیا کہ اُس نے بچی کو بازو سے پکڑا جس کے دوران اسکارف پھٹ گیا تاہم اُس کا ایسا کوئی ارادہ نہ تھا۔

پڑھیں:  امریکی مسلمان باکسر کو حجاب کے ساتھ کھیلنے کی اجازت

متاثرہ طالبہ نے پولیس کو بیان دیا کہ ٹیچر نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا اور اسکارف اتارنے کی دھمکی بھی دی۔ ٹیچر کے تشدد کے بعد اسکول انتظامیہ نے متاثرہ بچی کو طبی سہولیات فراہم کرنے کے لیے اسپتال منتقل کیا۔ ڈاکٹر کے مطابق بچی کی آنکھ میں معمولی چوٹ آئی تاہم آنکھ کا قرنیہ محفوظ رہا۔

مزید پڑھیں:  مسلم خاتون کو حجاب اتارنے پر مجبور کردیا گیا

 وزیرتعلیم کے ترجمان مائیکل امیکن نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ ’’ٹیچر کا طالبہ کے ساتھ یہ برتاؤ کسی صورت قابل قبول نہیں، اس لیے متعلقہ ٹیچر کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی‘‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں