The news is by your side.

Advertisement

موڈ خراب ہونے پر ٹیچر کا ننھے بچوں سے انسانیت سوز سلوک

چین کے ایک کنڈر گارڈن میں ایک ٹیچر کو، ننھے بچے کو بالوں سے پکڑ کر جگانے اور زمین پر پٹخنے کے بعد پولیس نے گرفتار کرلیا۔

یہ افسوسناک واقعہ جنوبی چین میں واقع ایک کنڈر گارڈن میں پیش آیا۔ ٹیچر کی بے رحمی سی سی ٹی وی کیمرے میں ریکارڈ ہوگئی جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اس نے سوتے ہوئے بچے کو جھنجھوڑ کر اٹھایا اور زمین پر پٹخ دیا۔

ٹیچر کی بے رحمی اس وقت سامنے آئی جب ماں نے بچے کے سر اور جسم پر زخموں کے نشان دیکھے اور کنڈر گارڈن کی انتطامیہ سے اس کی شکایت کی۔ ماں نے ان سے سی سی ٹی وی فوٹیج دکھانے کا مطالبہ بھی کیا۔

ماں کا کہنا تھا کہ واقعے کے بعد بچے نے مستقل سر درد کی شکایت بھی کی جس کے بعد اسے ڈاکٹر کے پاس لے جایا گیا۔

مذکورہ ماں کی شکایت کے بعد دیگر والدین نے بھی شکایت کی کہ ان کے بچے کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ والدین کی شکایت کے بعد جب انتظامیہ نے مزید فوٹیجز چیک کیں تو اس نوعیت کے مزید واقعات کے بارے میں علم ہوا۔

ایک فوٹیج میں دیکھا گیا کہ ایک ٹیچر نے بچے کو سزا کے طور پر کئی گھنٹے تک بیڈ پر کھڑا رکھا۔ ایک اور ویڈیو میں ٹیچر نے سوتے ہوئے بچوں کو مار کر جگایا اور اس دوران اس نے لوہے کے اسکیل کا استعمال کیا جس سے بچوں کے سر پر مارا۔

کنڈر گارڈن کی دوسری ٹیچرز کا کہنا ہے کہ بچے کو پٹخنے والی ٹیچر یوں تو ایک خوش مزاج خاتون ہیں تاہم اس دن ان کا موڈ خراب تھا۔

پولیس نے مذکورہ ٹیچر کو گرفتار کر کے تفتیش شروع کردی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں