The news is by your side.

Advertisement

‏’شعبہ ٹیکنالوجی سے اقتصادی ترقی میں 9.7 کھرب روپے کا سالانہ اضافہ ہو سکتا ہے‘‏

گوگل اور پاکستان سافٹ ویئر ہاؤس ایسوسی ایشن (پاشا) نے ان لاکنگ پاکستان ڈیجیٹل پوٹینشل کے عنوان سے ‏رپورٹ جاری کردی۔

ڈیجیٹل ٹرانسفارمیشن کے حوالے سے جاری کردہ رپورٹ میں ٹیکنالوجی کے شعبے میں پاکستان کی ترقی سے ‏متعلق معلومات فراہم کی گئی ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2030 تک پاکستان کی اقتصادی ترقی میں 9.7 کھرب روپے کا سالانہ اضافہ کرسکتی ہے ‏جو 2020 میں ملک کی مجموعی پیداوار کے 19 فیصد کے برابر ہے۔

گوگل اور پاشا کے زیر اہتمام آن لائن ایونٹ میں کے دوران رپورٹ میں بتایا گیا کہ پاکستان 3 لاکھ سے زائد آئی ٹی ‏پروفیشنلز کا مرکز ہے جبکہ ملکی سطح پر سالانہ 25,000 سے زائد آئی ٹی گریجویٹس تیار ہوتے ہیں۔ پاکستان اب ‏تک 700 سے زائد ٹیک کمپنیز کو بھی تیار کرچُکا ہے۔

اس رپورٹ کی تشکیل میں الفاء بیٹا کے اکنامسٹس نے تعاون فراہم کیا جن کا کہنا تھا کہ پاکستان انفرااسٹرکچر ‏کی ترقی، آئی ٹی سیکٹر کی برامدات کے لیے سازگار ماحول اور جدید ڈیجیٹل صلاحیتوں کو فروغ دے کر ملک ‏میں ٹیک ایکوسسٹم کو مُستحکم کرسکتا ہے۔صدر مملکت، عارف علوی نے تقریب کے دوران اظہار خیال کرتے ‏ہوئے کہا کہ پاکستانی معیشت میں گوگل پروڈکٹس کے استعمال سے روزگار کے 4 لاکھ 10 ہزار سے زائد مواقع ‏فراہم کئے جاتے ہیں۔

گوگل کے ریجنل ڈائریکٹر فرحان قریشی نے کہا کہ ہم نے حال ہی میں نیشنل رْورل سپورٹ پروگرام (‏NRSP‏) کے ‏ساتھ مل کر زیادہ سے زیادہ پاکستانیوں کو آن لائن سیفٹی اسکلز اور ڈیجیٹل خواندگی فراہم کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں