site
stats
پاکستان

بھارت مقبوضہ کشمیر میں اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے،پاکستان

جنیوا : جنیوا میں پاکستان کی مستقل مندوب تہمینہ جنجوعہ نے کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر سےعالمی برادری کی توجہ ہٹانے کے لیےاوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ عوام کی قتل و غارت کا سلسلہ بند کرائے اورآزادانہ تحقیقات کرائی جائیں۔

جنیوا میں انسانی حقوق کونسل کے اجلاس کے دوران پاکستان کی مستقل مندوب تہمینہ جنجوعہ کا کہنا تھا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں قابض فوجیوں کے ہاتھوں بے گناہ عوام کا قیمتی خون بہا رہا ہے اس لیے عالمی برادری کو چاہئے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں نہتےعوام کی قتل وغارت کا سلسلہ بند کرانے میں اپنا اہم کردار ادا کرے اور کشمیر میں ہونے والے ماورائے عدالت قتل اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی شفاف اور آزادنہ تحقیقات کرائی جائیں۔

تہمینہ جنجوعہ کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام گزشتہ 60 برس سے اپنے حق خود ارادیت کے حصول کے لئے پرامن جدوجہد کررہے ہیں جس کے دوران بھارتی قابض فوجیوں نے 1989 سے لے کر اب تک 1 لاکھ سے زائد بے گناہ کشمیریوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا ہے جب کہ دس ہزار سے زائد کشمیری زخمی ہوئے ہیں محض گزشتہ ماہ ہی میں 100 سے زائد کشمیری نوجوانوں کو بھارتی فورسز کے ہاتھوں اپنی جانوں سے ہاتھ دھونا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کشمیریوں کی حق خود ارادیت کی تحریک کو دہشت گردی قرار دیتا ہے اور خود اپنی ریاستی دہشت گردی سے توجہ ہٹانے کے لئے تمام ظالمانہ ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے۔

اس سے پہلے سرکاری نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے تہمینہ جنجوعہ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے اقوام متحدہ ، عالمی برادری اور تمام انسانی حقوق کی تنظیموں کے سامنے کشمیری عوام کی آواز کو بلند کیا ہے۔ جبکہ عالمی برادری کو کشمیریوں کے خلاف بھارت کی جانب سے ڈھائے جانے والے ظلم و ستم اور موجودہ حالات سے حوالے سے آگاہ کیا ہے۔

انہوں نے مذید بتایا کہ اس حوالے سے پاکستان کی جانب سے اپنے خصوصی نمائندے اویس احمد خان لغاری کو بھی جنیوا بھیجا گیا تھا تاکہ وہ دنیا کی اہم شخصیات سے مل کر کشمیر کی صورتحال پر تبادلہ خیال کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top