The news is by your side.

ماڈل ٹریزا نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ لاہورہائی کورٹ میں چیلنج کردیا

لاہور: ہیروئن اسمگلنگ کیس میں چیک ریپلک کی ماڈل ٹیریزا ہلسکوا نے ٹرائل کورٹ کا فیصلہ لاہورہائی کورٹ میں چیلنج کردیا۔

تفصیلات کے مطابق چیک ریپلک کی ماڈل ٹیریزا ہلسکوا نے ٹرائل کورٹ کے فیصلے کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ عدالت نے حقائق کے برعکس منشیات کیس میں سزا کا فیصلہ سنایا، بے قصورہوں منشیات کا الزام کسٹم حکام نے لگایا۔

غیرملکی ماڈل نے درخواست میں کہا کہ پاکستان میں اسلامک اسٹڈیزکے لیے آئی تھی۔ انہوں نے درخواست میں استدعا کی کہ عدالت 8 سال سزا کا فیصلہ کالعدم قراردے کررہا کرنے کا حکم دے۔

لاہور: ہیروئن اسمگلنگ میں ملوث جمہوریہ چیک کی ماڈل کو آٹھ سال کی سزا

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ چیک ری پبلک سے تعلق رکھنے والی ماڈل ٹیریزا کولاہور کی مقامی عدالت نے بے گناہی ثابت نہ ہونے پر آٹھ برس آٹھ ماہ قیداورایک لاکھ تیرہ ہزار جرمانے کی سزا سنائی تھی۔

عدالت نے اس مقدمے میں شریک ملزم شعیب حفیظ کوناکافی ثبوتوں کی بناء پربری کیا تھا۔

عدالتی فیصلے کے بعد ماڈل ٹیریزا آبدیدہ ہو گئیں تھی،ماڈل ٹریزا کا کہنا تھا کہ میرے لیے مشکل وقت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایک ایسے جرم کے الزام میں پندرہ مہینے جیل کاٹی جو کیا ہی نہیں تھا۔

واضح رہے کہ ماڈل ٹیریزا کی رہائی کے لیے پاکستانی ٹی وی چینل اور ویب سائٹ کو دھمکی آمیز ای میل بھیجنے پر چیک میں قیام پذیر21 سالہ بلغارین نوجوان نکولائی سموئنوف ایوانوف کو چیک کی عدالت نے 40 ماہ قید کی سزا سنائی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں