The news is by your side.

Advertisement

سزایافتہ نوازشریف کو ہارٹ اٹیک نہیں ہوا، میڈیکل رپورٹ میں تصدیق

لاہور : میڈیکل رپورٹ میں تصدیق کی گئی ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کو ہارٹ اٹیک نہیں ہوا، دل کا ٹروپ آئی ٹیسٹ نیگٹو آیا جبکہ سی ٹی اسکین میں سابق وزیراعظم کے بائیں گردےمیں پتھری کا انکشاف ہوا تھا۔

تفصیلات کے مطابق سروسز ہسپتال میں زیر علاج نواز شریف کا ہارٹ اٹیک جاننے کے لیے خون کے نمونے ٹروپ آئی ٹیسٹ کے لیے پی آئی سی بجھوائے گئے تھے، جس کا رزلٹ نیگٹو آیا ہے۔

ٹروپ آئی ٹیسٹ نیگٹو آنے کا مطلب ہے کہ نواز شریف کو ہارٹ اٹیک نہیں ہوا۔

اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے عارضہ قلب کے حوالے سے پرانے ایشو چل رہے ہیں لیکن اب ہارٹ اٹیک نہیں ہوا، جناح اسپتال بورڈ کی جانب سے کیا گیا ٹروپ آئی ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد نواز شریف کا دوبارہ ٹروپ آئی ٹیسٹ کیا گیا ہے، جو نیگیٹو آیا ہے۔

خیال رہے نوازشریف کولاحق عارضہ قلب کامسئلہ پراناہے،سابق وزیراعظم نےدوہزارسولہ میں لندن سےاوپن ہارٹ سرجری بھی کرائی تھی۔

مزید پڑھیں : نواز شریف کے بائیں گردے میں پتھری نکل آئی: اسپتال ذرائع

گذشتہ روز لاہور کے سروسز اسپتال میں نواز شریف کا سی ٹی اسکین سمیت گردے مثانے کا بھی ایکسرے کیا گیا تھا ، جس میں وزیرِ اعظم نواز شریف کی سی ٹی اسکین ٹیسٹ رپورٹ میں بائیں گردے میں پتھری کی تشخیص ہوئی تھی۔

طبی ماہرین کا کہنا تھا پتھری مائنر ہےجولتھوٹرپسی کےذریعے نکالی جا سکتی ہے۔

یاد رہے ہفتے کے روز نواز شریف کو سروسز اسپتال منتقل کیا گیا تھا، جہاں میڈیکل بورڈ کی سفارش پر شوگر اور بلڈ پریشر ٹیسٹ کئے گئے تھے، نواز شریف کے ایک گھنٹے تک سٹی اسکین اورالٹراساؤنڈ سمیت دیگر ٹیسٹ کیے گئے اور انھیں طبی معائنےکےبعد نیواوپی ڈی سے وی وی آئی پی بلاک پہنچادیا گیا تھا۔

واضح رہے میڈیکل بورڈ نے ای سی جی، کارڈیوگرافی اور دیگر ٹیسٹ کی تسلی بخش رپورٹ نہ آنے پر نواز شریف کو اسپتال منتقل کرنے کی تجویز دی تھی، جس کے بعد وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے نوازشریف کو فوری اسپتال منتقل کرنے کی منظوری دی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں